The news is by your side.

Advertisement

پنجاب بھر میں نیا بلدیاتی نظام نافذ، ایڈمنسٹریٹر تعینات، نوٹی فکیشن جاری

لاہور: صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت نے کہا ہے کہ نئےبلدیاتی نظام کےایڈمنسٹریٹرزکانوٹیفکیشن جاری ہوگیا جس کے تحت اب صوبے بھر میں کابینہ کمیٹی کے ماتحت کام کیا جائے گا۔

راجہ بشارت کا کہنا تھا کہ ڈویژنل،ضلعی سطح پرعملدرآمد کے لیے ٹیمیں کام کریں گی، کابینہ کمیٹی کے سربراہ وزیربلدیات پنجاب ہوں گے، جو پورے عمل کی نگرانی اور ضروری ہدایت جاری کریں گے۔

انہوں نے بتایا کہ صوبائی ٹیم کے سربراہ ایڈیشنل چیف سیکریٹری ہوں گے جبکہ ڈویژنل اورضلعی ٹیم کے سربراہ متعلقہ کمشنراورڈپٹی کمشنرہوں گے، تمام ٹیمیں ٹرانزیشن پلان کےتحت جلدعملدر آمدکویقینی بنائیں گی۔

مزید پڑھیں: پنجاب کی مقامی حکومتیں بھی مسلم لیگ ن کے ہاتھ سے نکل گئیں

یاد رہے کہ 30 اپریل کو پنجاب اسمبلی میں نئے بلدیاتی نظام کا قانون منظورکرلیا گیا تھا۔ اپوزیشن نے بل کی منظوری کے خلاف ایوان میں احتجاج کیا تھا۔نئے بلدیاتی نظام کے تحت ویلج کونسل اور شہروں میں محلہ کونسل کا انتخاب غیرجماعتی بنیادوں پر ہوگا۔

ایک روز قبل گورنر پنجاب چوہدری سرور نے لوکل گورنمنٹ بل 2019 پر دستخط کیے جس کے بعد نیا بلدیاتی نظام صوبے میں نافذ ہوگیا۔ نئے بلدیاتی نظام کے تحت پنجاب کےبلدیاتی ادارےایڈمنسٹریٹرز چلائیں گے جن کی معیاد ایک سال تک ہوگی۔ لوکل گورنمنٹ بل منظور ہوتے ہی مسلم لیگ ن کے ہاتھ سے لوکل گورنمنٹ بھی نکل گئی۔

نئے بلدیاتی الیکشن آئندہ سال ہوں گے جب تک شہروں میں میونسپل اور محلہ کونسل جبکہ دیہات میں تحصیل اور ویلج کونسل ایڈمنسٹریٹرز کے تحت کام کریں گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں