The news is by your side.

Advertisement

‏’مقامی گیس کی طلب درآمدی گیس سے پوری نہیں ہو سکتی‘‏

وفاقی وزیر توانائی حماداظہر نے کہا ہے کہ بڑھتی ہوئی مقامی گیس کی طلب درآمدی گیس سےپوری نہیں ہو ‏سکتی۔

ٹوئٹر پر جاری بیان میں حماداظہر نے کہا کہ پاکستان میں گیس کے 2 سرکٹ کام کر رہے ہیں 70فیصدمقامی اور ‏‏30فیصد درآمدی گیس فراہم کی جارہی ہے۔

حماداظہر نے کہا کہ گیس کی قیمت اورفراہمی مخصوص طریقہ کار سے طے ہوتی ہے موسم سرمامیں مقامی ‏سطح پرگیس کی طلب بڑھ جاتی ہے بڑھتی ہوئی مقامی گیس کی طلب درآمدی گیس سےپوری نہیں ہوسکتی، ‏مقامی، درآمدی گیس کی اوسط قیمت کیلئے قانون سازی مسئلےکاحل ہے۔

گزشتہ روز وفاقی وزیر حماد اظہر نے کہا تھا کہ ایل این جی اور سردیوں میں ہونے والے گیس بحران کا آپس میں ‏کوئی تعلق نہیں ہے گھریلو سطح پر گیس کی مانگ بڑھ رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ نیپرا نے آرایل این جی پلانٹس کو فیول نہ ملنےکی وجہ سے پیسے نہیں کاٹے بلکہ گھریلو سطح ‏پر گیس کی مانگ بڑھتی جارہی ہے، بلوچستان کے علاقے سوئی میں پایا جانے والا گیس کاذخیرہ ہمیں کہیں نہیں ‏مل رہا۔ وفاقی وزیر نے مزید وضاحت کی کہ سردیوں میں آنے والےگیس بحران کا ایل این جی سے کوئی تعلق ‏نہیں ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں