The news is by your side.

Advertisement

کرونا وائرس: بیلجیئم کے وزیر اعظم کا اہم اعلان

برسلز: بیلجیئم کے وزیر اعظم نے کرونا وائرس کی دوسری لہر کے دوران بڑھتے کیسز کے پیش نظر اتوار سے ملک میں پھر لاک ڈاؤن کا اعلان کر دیا ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق کرونا وائرس کی وبا کی دوسری لہر کے دوران مختلف یورپی ممالک میں کیسز کی تعداد پھر سے بڑھنے لگی ہے، جسے قابو کرنے کے لیے متعدد ممالک نے ایک بار پھر لاک ڈاؤن کا راستہ اپنا لیا ہے۔

بیلجیئم کے وزیر اعظم الیگزینڈر ڈی کرو نے بھی ملک میں لاک ڈاؤن کا اعلان کر دیا ہے، انھوں نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ لاک ڈاؤن 13 دسمبر تک نافذ العمل رہےگا۔

ان کا کہنا تھا لاک ڈاؤن اس بات کو یقینی بنانا ہے کہ صحت کی دیکھ بھال کا نظام تباہ نہ ہو، تاہم اس دوران میڈیکل اسٹورز اور فوڈ سیکٹر سے منسلک کاروبار کھلے رہیں گے، جب کہ اسکول 15 نومبر تک بند رہیں گے۔

کرونا بے قابو، فرانس کا بڑا فیصلہ

بیلجیئم میں اب تک کرونا وائرس سے 11,452 افراد ہلاک ہو چکے ہیں جب کہ متاثرہ افراد کی تعداد 4 لاکھ 12 ہزار سے زائد ہے۔

ادھر فرانس میں کرونا وائرس سے ایک دن میں 545 اموات واقع ہو گئی ہیں، جب کہ 24 گھنٹوں میں 50 ہزار کے قریب نئے کیسز ریکارڈ کیےگئے۔

یاد رہے کہ دو دن قبل کرونا وائرس وبا کی روک تھام کے لیے فرانس میں بھی ایک بار پھر لاک ڈاؤن کا فیصلہ کیا گیا تھا، واضح رہے کہ یہ فرانس میں دوسرا ملک گیر لاک ڈاؤن ہے، جس میں سخت پابندیاں عائد کی گئی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں