The news is by your side.

Advertisement

سان فرانسسکو کی پہلی سیاہ فام خاتون میئر سے ملیے

کیلیفورنیا : امریکا کے شہر سان فرانسسکو کی تاریخ میں پہلی مرتبہ 43 سالہ افریقی خاتون لندن بریڈ 50 فیصد ووٹ حاصل کرکے شہر کی میئر بن گئیں۔

تفصیلات کے مطابق امریکی ریاست کیلیفورنیا کے شہر سان فرانسسکو کی تاریخ میں پہلی بار سیاہ فارم امریکی خاتون نے میئر کا حلف اٹھایا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ افریقی نژاد لندن بریڈ لمبے عرصے سے اپنی کمیونٹی میں سرگرم تھی، میئر کے انتخابات کے ایک ہفتے بعد لندن بریڈ کو فاتح قرار دیا گیا۔

امریکی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ 43 سالہ لندن بریڈ نے کل 50 فیصد ووٹ حاصل کرکے میئر کے انتخابات میں کامیاب ہوئی ہیں۔

لندن بریڈ واحد خاتون میئر ہیں جو امریکا کے پندرہ بڑے شہروں میں ایک سان فرانسسکو میں اپنی خدمات انجام دیں گی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق سان فرانسسکو میں تیزی سے بے گھر افراد کی تعداد میں اضافہ ہوتا جارہا ہے، شہر کی گلیوں میں بڑی تعداد میں جھگی بستیاں آباد ہیں کیوں کہ زمینوں کی قیمتیں آسمان کو چھونے لگیں ہیں۔

سان فرانسسکو کی نو منتخب میئر مسز بریڈ شہری حکومت میں قانون ساز بورڈ کے صدر کی حیثیت سے بھی خدمات انجام دے چکی ہیں اور گذشتہ برس دسمبر میں میئر کے انتقال کے بعد نگراں میئر کے فرائض کی انجام دہی بھی کرچکی ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ سان فرانسسکو کے انتخابات رواں ماہ 5 جون کو ہوئے تھے، لیکن الیکشن کے نتائج تاخیر کا شکار ہوگئے تھے کیوں کہ الیکشن کمیشن کے اہلکاروں نے ہزاروں ووٹ غلط شمار کیے تھے۔

خیال رہے کہ لندن بریڈ شہر کی پہلی خاتون میئر نہیں ہیں، ان سے قبل ڈیانے فین سٹین 1978 میں سان فرانسسکو کی میئر رہ چکی ہیں جو تاحال کیلیفورنیا کی سینیٹر ہیں۔

یاد رہے کہ لندن بریڈ کی بہن سنہ 2006 میں بہت زیادہ منشیات استعمال کرنے کے باعث ہلاک ہوگئی تھیں جبکہ ان کا بھائی کئی دنوں میں جیل میں قید ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں