The news is by your side.

Advertisement

مستحکم افغانستان ہی پاکستان کے مفاد میں ہے، نواز شریف

لندن : وزیراعظم میاں نواز شریف نے کہا ہے کہ تحقیقات کے بعد پٹھان کوٹ حملےکے حقائق سامنےلائیں گے، پاکستان میں دہشت گردی کے واقعات میں افغان حکومت نہیں بلکہ وہاں پر رہنے والے دہشت گرد ملوث ہیں۔ ایک مستحکم افغانستان ہی پاکستان کے مفاد میں ہے۔

یہ بات انہوں سویٹزر لینڈ سے واپسی کے بعد لندن میں اپنی رہائش گاہ کے باہرمیڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہی، نواز شریف نے صحافیوں سے گفتگو میں افغانستان سےدہشت گردوں کے خلاف سخت کارروائی کامطالبہ کردیا۔

ان کا کہنا تھا کہ سرحد پارسےحملوں کاتدارک ہوناچاہیئے۔ ایک سوال کے جواب میں نواز شریف نے کہا کہ چارسدہ حملے کے بعد پاکستان کی طرف سے بھارت پر کوئی الزام نہیں لگایا گیا ۔دونوں ممالک کو ایک دوسرے کے معاملات میں دخل اندازی نہیں کرنی چاہئے۔

پٹھان کوٹ کے معاملے پر ہمیں بھارت کی طرف سے کچھ شواہد ملے جن پر تحقیقات جاری ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی تحقیقاتی ٹیم پٹھان کوٹ کا دورہ کرے گی۔ تحقیقات مکمل ہونے پر جو بھی حقائق ہونگے انہیں عوام کے سامنے لایا جائے گا۔

وزیراعظم نے کہا کہ افغانستان میں امن اور استحکام کے بہت بڑے حامی ہیں۔ افغانستان میں امن کا راستہ صرف بات چیت ہے۔ ایک مستحکم افغانستان ہی پاکستان کے مفاد میں ہے۔

سعودیہ ایران کشیدگی کے سوال پر ان کا کہنا تھا کہ ہماری خواہش ہے کہ سعودی عرب اور ایران میں معاملہ ختم ہو۔ہم نے اپنی خواہش پر ثالثی کا کردار ادا کیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں