The news is by your side.

Advertisement

پاکستان بمقابلہ افغانستان، لندن پولیس کی چار افراد کو گرفتار کرنے کی تصدیق

لیڈر: لندن پولیس نے پاکستان اور افغانستان کے میچ میں ہنگامہ آرائی کرنے والے چار افراد کو حراست میں لینے کی تصدیق کردی۔

لندن کی ویسٹ ورکشائر پولیس کی جانب سے جاری ہونے والے اعلامیے کے مطابق اسٹیڈیم میں زبردستی داخل ہونے اور میچ کے دوران حالات خراب کرنے میں ملوث چار افراد گرفتار ہیں جن سے تفتیش شروع کردی گئی۔ ورکشائر پولیس نے حراست میں لیے جانے والے افراد کی شناخت ظاہر نہیں کی۔

دوسری جانب انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) اور ورکشائر پولیس نے لیڈز اسٹیڈیم کے باہر پاکستان مخالف مہم کا بھی نوٹس لے لیا جبکہ میچ کے دوران اسٹیڈیم کی حدود میں اڑنے والے جہاز کے پاکستان مخالف بینرز لہرانے پر تحقیقات شروع کردیں۔

مزید پڑھیں: پاکستان نے آئی سی سی سے ٹیم سیکیورٹی بڑھانے کا مطالبہ کردیا

فلائٹ پاتھ پربنا اجازت جہاز اڑانے پر لیڈز کے ائیرٹریفک کنٹرول نے سختی سے نوٹس لیتے ہوئے واقعے کی تحقیقات شروع کردیں۔

آئی سی سی کی جانب سے جاری ہونے والے اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ کسی کو میچ کے دوران سیاسی یا نفرت آمیزتشہیرکی اجازت نہیں دی جاسکتی، مستقبل میں ایسے واقعات کی روک تھام کے لیے اقدامات یقینی بنائے جائیں۔

پاک افغان میچ کےدوران گراؤنڈاورراونڈسےباہرکشیدہ صورتحال رہی، میچ سے قبل کئی افغان تماشائیوں نے ایک پاکستانی تماشائی کو تشدد کا نشانہ بنایا۔میچ کے اختتام پر افغان تماشائی گراؤنڈ کے اندر بھی داخل گئے تھے، انہوں پاکستانی ٹیم کو بھی نشانہ بنانے کی کوشش کی تھی۔اس لڑائی جھگڑے میں ملوث متعدد افراد کو مقامی سیکیورٹی اہلکاروں نے پکڑا، بعد ازاں اس واقعے پر آئی سی سی نے ہنگامہ آرائی میں ملوث افغان تماشائیوں کے خلاف سخت کارروائی کا عندیہ دیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: لیڈز: ٹیم کی شکست دیکھ کر افغان تماشائی بپھر گئے، پاکستانی فینز پر حملہ

خیال رہے کہ گزشتہ روز کے میچ میں افغانستان کی جانب سے دیا گیا 228 رنز کا ہدف پاکستان ٹیم نے آخری اوور میں 7 وکٹوں کے نقصان پر پورا کیا، عماد وسیم اور وہاب ریاض نے شدید دباؤ میں بھی ذمہ دارانہ بیٹنگ کی، فتح کے بعد پاکستان پوائنٹس ٹیبل پر چوتھی پوزیشن پر آ گیا ہے، جب کہ سیمی فائنل تک رسائی کے لیے قومی ٹیم کو اس میچ میں فتح حاصل کرنا لازمی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں