The news is by your side.

Advertisement

لندن کے مختلف مقامات سے بم برآمدگی کا معاملہ، پولیس نے تفتیش شروع کردی

لندن : برطانیہ کی انسداد پولیس نے دارالحکومت میں ریلوے اسٹیشن اور ہوائی اڈوں سے بم برآمدگی کی تحقیقات کا آغاز کردیا۔

تفصیلات کےمطابق برطانیہ کے دارالحکومت لندن کے ریلوے اسٹیشن، ہیتھرو اور لندن سٹی ایئرپورٹ سے دھماکا خیز مواد کے چھوٹے سائز کے تین پیکٹ بم برآمد ہوئے تھے جس کے بعد پولیس نے تینوں مقامات کی سیکیورٹی ہائی الرٹ کردی تھی۔

برطانوی پولیس کا ابتدائی تحقیقات میں کہنا تھا کہ مختلف مقامات سے برآمد ہونے والے دھماکا خیز مواد سے صرف مختصر پیمانے آتشزدگی کا واقعہ پیش آتا۔

پولیس نے میڈیا کو بتایا کہ پارسل کو تفتیشتی مرکز بھجوایا گیا تھا جہاں اسے کھولتے ہی معمولی آگ بھڑکی اور پیکٹ کا کچھ حصّہ خاکستر ہوگیا تاہم آتشزدگی کے واقعی نہ کوئی زخمی ہوا نہ ہی کوئی مالی نقصان ہوا۔

تفتیشی افسران کے مطابق مذکورہ پارسل میں سے ملنے والے دھماکا خیز مواد کے معائنے سے معلوم ہوتا ہے کہ مواد میں فوری طور پر جلانے کی صلاحیت ہے لیکن وہ بڑے پیمانے پر نقصان پہنچانے کی صلاحیت نہیں رکھتا۔

اسکاٹ لینڈ یارڈ کا کہنا ہے کہ پولیس نے دارالحکومت کے مختلف مقامات سے ایک گھنٹے کے دوران اے فور سائز لفافوں سے برآمد ہونے والے بموں سے متعلق تفتیش کر رہی ہے۔

برطانوی خبر رساں ادارے کا کہنا ہے کہ بم کی اطلاع کے باوجود ایئرپورٹ انتظامیہ نے فلائٹ آپریشن معمول کے مطابق جاری رکھا تاہم بم ملنے والے تمام مقامات پر سیکیورٹی ہائی الرٹ کردی گئی ہے۔

مزید پڑھیں : لندن : گیٹ وک کے بعد ہیتھرو ایئرپورٹ پر بھی مشکوک ڈرونز کی پرواز، فوج طلب

خیال رہے کہ اس سے قبل لندن کے ہیھترو سمیت دو انٹرنیشنل ایئرپورٹس پر مشکوک ڈرونز کی پروازوں کے بعد فلائٹ آپریشن معطل کرکے تحقیقات کےلیے فوج کو طلب کیا گیا تھا۔

مزید پڑھیں : گیٹ وک ایئرپورٹ: ڈرون سے ملنے والے فنگر پرنٹ کی مماثلت نہ ہوسکی

یاد رہے کہ ایک ماہ قبل لندن کے انٹرنیشنل گیٹ وک ایئرپورٹ پر دو مشکوک ڈرونز کی پروازوں کے باعث مسلسل 36 گھنٹے تک پروازیں منسوخ رہی تھیں، جس کے باعث ڈیڑھ لاکھ مسافر متاثر ہوئے تھے۔

مقامی خبر رساں ادارے کے مطابق مشکوک ڈرونز کو کنٹرول کرنے پولیس کی ناکامی کے بعد حکومت نے فوج کی خدمات حاصل کی تھیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں