لندن میں چاقو زنی کی وارداتوں میں ہوش ربا اضافہ، رپورٹ جاری london knife attacks
The news is by your side.

Advertisement

لندن میں چاقو زنی کی وارداتوں میں ہوش ربا اضافہ، رپورٹ جاری

لندن: برطانوی پولیس نے ملک بھر میں ہونے والی چاقو زنی کی وارداتوں کے حوالے سے رپورٹ جاری کردی جس میں انکشاف کیا گیا ہے کہ چھری کے ذریعے نشانہ بنانے کے واقعات میں ہوش ربا اضافہ ہوا۔ 

تفصیلات کے مطابق برطانوی پولیس نے ملک کے مختلف شہروں میں ہونے والی چاقو زنی کی وارداتوں کے اعدادو شمار جاری کردیے ، رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ رواں برس حملوں میں اضافہ ہوا اور  16 فیصد واقعات برطانوی دارالحکومت لندن میں پیش آئے۔

برطانوی پولیس کے مطابق جرائم میں اضافے کی وجہ منشیات کا استعمال ہے، جرائم پیشہ افراد نشے میں دھت ہوکر اس طرح کے واقعات میں ملوث پائے گئے ہیں۔

اعدادوشمار کے مطابق فروری کے پہلے ہفتے میں صرف لندن کے 283 شہریوں کو حملہ آوروں نے نشانہ بنایا جبکہ پولیس نے چھاپہ مار کارروائیوں میں 250 سے زائد چھریاں ودیگر مسروقہ سامان برآمد کیا۔

رواں سال مارچ میں چاقو کے وار کے 14 واقعات رپورٹ ہوئے جس میں ایک افراد ہلاک اور 11 زخمی ہوئے۔

اپریل میں چاقو زنی کی 7 وارداتیں ہوئیں جن میں خاتون سمیت 2 افراد قتل ہوئے اور 7 افراد زخمی ہوئے، واردات کے بعد لندن پولیس نے شک کی بنیاد پر جائے وقوعہ سے خاتون اور نوجوان کو حراست میں بھی لیا۔

اسی طرح مئی میں چاقو سے حملوں کی 5 وارداتیں ریکارڈ ہوئیں جس کے نتیجے میں 3 افراد ہلاک اور 2 زخمی ہوئے۔

رپورٹ کے مطابق جون میں لندن کے علاقے کنگسٹن اسٹریٹ پر چاقو کے وار سے دو افراد زخمی ہوئے جبکہ ساؤتھ لندن میں 20 سالہ شخص جان کی بازی ہار گیا، 12 جون کو 20 سالہ نوجوان کو چاقو کے وار سے زخمی کیا گیا، جبکہ 17 جون کو جنوب مشرقی لندن میں 15 سالہ نوجوان کو نشانہ بنایا گیا۔

اسی طرح جولائی میں 17 سالہ کترینا کو چاقو سے  نشانہ بنایا گیا  جائے وقوعہ پر موجود شہریوں نے لڑکی کو ابتدائی طبی امداد فراہم کی تاہم وہ دوران علاج دم توڑ گئی، چالیس سالہ شخص  کو چاقو کے وار سے زخمی کیا گیا جسے لندن ایئر ایمبولینس کے ذریعے اسپتال پہنچایا گیا۔

لندن پولیس کے مطابق رواں برس  اگست میں چاقو زنی کی وارداتوں میں 6 افراد قتل اور متعدد زخمی ہوئے جبکہ پولیس نے 16 سالہ لڑکے اور ایک خاتون کو حراست میں بھی لیا۔

ستمبر میں تین افراد کو چاقو کے وار سے نشانہ بنایا گیا، نوجوان اسپتال منتقل کرنے کے دوران زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے ہلاک ہوگیا جبکہ دو افراد زخمی ہوئے۔

 یکم اکتوبر سے 13 اکتوبر کے درمیان دو افراد کو چاقو کے وار سے زخمی کیا گیا۔

برطانوی پولیس کے مطابق رواں برس میں سب سے زیادہ  40،147چاقو زنی کی وارداتیں ہوئیں جو گزشتہ 10 سالوں سے کئی زیادہ ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں