The news is by your side.

Advertisement

لندن میں نوجوان لڑکی پر تیزاب سے حملہ

لندن: برطانیہ کے جنوب میں واقع علاقے برکسٹن میں نامعلوم شخص پبلک ٹرانسپورٹ کی بس میں نوجوان لڑکی پر تیزاب پھینک کر فرار ہوگیا، متاثرہ لڑکی کو اسپتال منتقل کردیا گیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق واقعے کے بعد تیزاب سے متاثرہ لڑکی فٹ پاتھ پر بیٹھ گئی جبکہ سیکیورٹی اہلکاروں نے اسے اسپتال منتقل کیا، جہاں اس کی حالت خطرے سے باہر بتائی جارہی ہے، چار روز میں یہ برطانوی دارالحکومت میں دن دیہاڑے ہونے والی 9 ویں مجرمانہ کارروائی ہے۔

بس کے اندر موجود عینی شاہدین کے مطابق نامعلوم شخص کی جانب سے تیزاب پھینکے جانے کے بعد لڑکی تکلیف سے چلاتی ہوئی بس سے اتر گئی، سڑک پر پیدل چلنے والے بعض افراد نے بوتلوں میں موجود پانی لڑکی پر ڈالا تاکہ اس کو محسوس ہونے والی تکلیف کم کی جاسکے۔

مزید پڑھیں: لندن: نامعلوم افراد کی فائرنگ سے ایک شہری ہلاک، ایک زخمی

واضح رہے کہ چند روز قبل لندن میں دو مختلف مقامات پر 13 اور 15 سالہ لڑکوں کو گولی مار کر زخمی کردیا گیا تھا، اس کے علاوہ تیسرے مقام پر فائرنگ سے ایک سترہ سالہ نوجوان ہلاک ہوگیا تھا۔

جنوبی لندن میں ہفتے اور اتوار کے روز بھی تیزاب سے حملے کے علاوہ فائرنگ کے چار اور چاقو سے حملے کے دو واقعات پیش آئے تھے۔

میئر لندن صادق خان کا ایک بیان میں کہنا تھا کہ پولیس کے بجٹ میں ایک ارب پاؤنڈ کی کمی کردی گئی ہے، بجٹ میں کمی کی وجہ سے ایک کروڑ سے زیادہ آبادی والے شہر میں تشدد کی کارروائیاں بڑھ گئی ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں