The news is by your side.

Advertisement

کم تنخواہ، لمبی ڈیوٹی اور جان ہتھیلی پر، اپنی زندگی کی پروا نہیں صرف عوام کا خیال

کراچی : کم تنخواہ اور لمبی ڈیوٹی کے باوجود جان ہتھیلی پر رکھ پر اسٹاک ایکسچینج حملے کو ناکام بنانے والے مرد مجاہد سیکیورٹی گارڈز ہی تو ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کم تنخواہ، لمبی ڈیوٹی اور ہتھیلی پر جان، کون خوشی سے ایسی نوکری کرے، لیکن ایسے بھی مرد مجاہد ہیں جنہیں اپنی زندگی کی پروا نہیں صرف عوام کا خیال ہے، بینک، بازاروں سمیت دیگر مقامات پر تعینات سیکیورٹی گارڈز جان ہتھیلی پر رکھ کر شہریوں کی حفاظت کرتے ہیں۔

نجی کمپنیوں کے سیکیورٹی گارڈز جو ہمی وقت عوام کی جان و مال کی حفاظت کے لیے تیار رہتے ہیں، جن کے پاس نہ تو جدید اسلحہ ہے نہ ہی بلٹ پروف جیکٹ لیکن ان کے پاس دہشت گردوں سے لڑنے کا عزم ضرور ہے۔

ایسے ہی جانبازوں میں سے ایک سیکیورٹی گارڈ صفدر بھی ہیں جو اپنے گھر کا واحد کفیل ہے اور ماہانہ 18 ہزار روپے تنخواہ پر بطور سیکیورٹی گارڈ اپنی خدمات پیش کرتا ہے۔

موسم کا کوئی بھی رنگ ہو، محمد صفدر ہاتھوں میں اسلحہ اٹھائے جان ہتھیلی پر رکھے شہریوں کی حفاظت کے لیے اپنے فرائض انجام دے رہے ہیں۔

سیکورٹی گارڈ صفدر اور ان کے ساتھی پاکستان اسٹاک ایکسچینج حملے میں اپنے شہید ساتھیوں کی بہادری اور جرات پر سلام پیش کرتے ہوئے کہتے ہیں کہ انھیں فخر ہے کہ وہ ملک کے لیے قربان ہوئے لیکن حکومت سے گلہ بھی ہے کہ ان کے لیے نہ کسی امدادی پیکج کا اعلان کیا گیا اور نہ ہی انھیں سہولیات دی جاتی ہیں۔

واضح رہے کہ ہر آنے جانے والے پر نظر رکھنا اور مشکوک سرگری کو بھانپ لینا، مختلف اداروں کے مرکزی دروازوں پر تعینات یہ سیکورٹی گارڈز دہشت گردوں کے سامنے مضبوط چٹان ہیں اور کسی بھی حملے کی صورت میں سیسہ پلائی ہوئی دیوار ثابت ہوتے ہیں جس کا مظاہرہ کل دہشت گردوں نے بھی پی ایس ایکس کے سیکیورٹی گارڈز کی صورت میں کرلیا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں