حکومتی منظوری کے بغیر ایل پی جی کی قیمتوں میں من مانا اضافہ
The news is by your side.

Advertisement

ایل پی جی کی قیمتوں میں من مانا اضافہ

اسلام آباد: آئل اینڈ گیس ریگولرٹی اتھارٹی (اوگرا) کی منظوری کے بغیر ہی  ڈسٹری بیوٹرز نے ایل پی جی گیس کے نرخوں میں فی کلو من مانا اضافہ کردیا۔

تفصیلات کے مطابق ڈسٹری بیوٹرز نے ایل پی جی قیمت میں فی کلو 15 روپے من مانا اضافہ کیا جس کے بعد گھریلو سلینڈر کی قیمت میں 177 روپے اور کمرشل سلینڈر کی نرخ میں 681 روپے فی کلو اضافہ ہوگیا۔

اوگرا نوٹی فکیشن کے بغیر ڈسٹری بیوٹرز نے ملک بھر میں ایل پی جی کی قیمتوں میں اضافہ کردیا، جس کے بعد 95 فیصد لوکل ایل پی جی کو عالمی مارکیٹ کی قیمت سے زیادہ قیمت میں فروخت کیا جارہا ہے۔

مزید پڑھیں: ایل پی جی کی قیمتوں میں 7 روپے فی کلو اضافہ

دوسری جانب ایل پی جی استعمال کرنے والے پبلک ٹرانسپورٹرز نے قیمتوں میں من مانے اضافہ کو مسترد کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ فوری طور پر متعلقہ افراد کے خلاف کارروائی عمل میں لائیں۔

عوام نے بھی قیمتوں میں اضافے کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ قیمتوں میں اضافے کو جواز بنا کر ٹرانسپورٹرز کرایوں میں اضافہ کر دیں گے جس کے براہ راست اثرات غریب عوام پر پڑیں گے۔

خیال رہے کہ 3 اگست 2018 کو اوگرا نے عالمی مارکیٹ میں ایل پی جی کی قیمت میں اضافے کے بعد پاکستان بھر میں بھی اس کی قیمتوں کو 7 روپے فی کلو بڑھا دیا تھا جس کے بعد فی کلو گرام قیمت 133 روپے تک پہنچ گئی تھی۔

یہ بھی پڑھیں: حکومت نے عوام پر ایل پی جی بم گرادیا

فی کلو 86 روپے اضافے کے بعد گھریلو اور کمرشل سلنڈر  329روپے میں بھرا جارہا تھا، علاوہ ازیں ایسوسی ایشن نے فی میٹرک ٹن میں بھی 7ہزار 2 سو 49 روپے کا اضافے کا اعلان کیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں