site
stats
بزنس

بڑی صنعتوں کی پیداوار چار سال کی بلند ترین سطح پر

اسلام آباد : پاکستان میں گزشتہ مالی سال کے دوران بڑی صنعتوں کی شرح نمو پانچ اعشاریہ چھ فیصد رہی جو کہ چار سال کی بلند ترین سطح ہے۔

تفصیلات کے مطابق بڑی صنعتوں کی پیداوار چار سال کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی، ادارہ شماریات کے مطابق صرف جون میں ایل ایس ایم گروتھ تین اعشاریہ تین فیصد رہی، بڑی صنعتوں میں اسی فیصد مینو فیکچر نگ شامل ہے۔

ایل ایس ایم گروتھ میں نمایاں کردار خوراک ومشروبات، فارماسیوٹیکلز، غیردھاتی معدنی مصنوعات، آٹو موبائلز، آئرن واسٹیل سیکٹر کا رہا جبکہ ٹیکسٹائل، کوک اینڈ پٹرولیم پروڈکٹس، فرٹیلائزر، الیکٹرونکس، پیپر اینڈ بورڈ، انجینئرنگ پروڈکٹس اور ربر پروڈکٹس کے شعبے بھی مثبت زون میں رہے۔

ملکی جی ڈی پی میں بڑی صنعتوں کا حصہ دس اعشاریہ سات فیصد ہے، سب سے زیادہ گروتھ آئرن اور اسٹیل سیکٹر میں ہوئی ۔ جس کے بعد الیکٹرونکس، خوراک، مشروبات اور آٹو سیکٹر شامل ہیں۔

فارماسوٹیکل سیکٹر میں نو فیصد کی بہتری ہوئی۔ جبکہ چمڑے، لکڑی اور کیمیکلز سیکٹر کی پیداوار میں کمی ریکارڈ کی گئی۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top