The news is by your side.

Advertisement

طالبان پاکستان میں نہیں افغانستان میں ہیں‘ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی

نیویارک : وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کا کہنا ہے کہ افغانستان میں جنگ کے ذریعے امن ممکن نہیں ہے، ہم سے زیادہ امن افغانستان میں کوئی نہیں چاہتا۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے جنرل اسمبلی سے خطاب کے بعد میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی مظالم پر250 صفحات کا ڈوزیئرپیش کیا۔

وزیراعظم پاکستان کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کے خلاف دلائل کے ساتھ حقیقت بیان کی،انہوں نے کہا کہ دہشت گردی یا کسی دہشت گردی کے حامی نہیں بلکہ اس کے خلاف جنگ میں شراکت دار ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اگرکوئی دہشت گردی کےخلاف لڑرہا ہےتو وہ پاکستان ہے،انہوں نے کہا کہ ہم نے کہیں سے ڈومور کی آوازنہیں سنی۔


بھارت نےمحدود جنگ کی پالیسی نہ بدلی تومنہ توڑ جواب ملےگا‘ وزیراعظم


وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا امریکہ کو کہا ہے کہ افغان مسئلے کا فوجی حل نہیں ہے جبکہ پاکستان افغانستان میں امن چاہتا ہے اورافغان عوام کو مسئلےکا حل خود ہی نکالنا ہے۔ انہوں نے کہا افغانستان میں بھارتی مداخلت قبول نہیں ہے۔

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ سول وعسکری قیادت ایک پیج پر ہے اور اس میں کوئی اختلاف نہیں ہے۔

واضح رے کہ وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے جنرل اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اگر بھارت نے ایل او سی کو پارکرنے کی کوشش کی یا پاکستان کے خلاف محدود جنگ کی پالیسی پرعمل درآمد کیا تو اس کا بھرپور جواب دیا جائے گا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں