The news is by your side.

Advertisement

فلم ’مالک‘ پر پابندی، وفاقی اور صوبائی حکومت کو جواب جمع کروانے کا آخری موقع

لاہور ہائیکورٹ نے فلم مالک پر پابندی کے خلاف درخواستوں پر وفاقی حکومت اور صوبائی حکومت کو جواب جمع کروانے کا آخری موقع دیتے ہوئے سماعت 19 مئی تک ملتوی کردی۔

جسٹس شمس محمود مرزا نے پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر میاں محمود الرشید سمیت دیگر افراد کی جانب سے دائر درخواستوں پر سماعت کی۔

مزید پڑھیں: فلم مالک پر پابندی، وفاق اور سینسر بورڈ سے جواب طلب

درخواست گزار کے وکلا نے دلائل دیے کہ اٹھارہویں ترمیم کی منظوری کے بعد وفاقی حکومت کو فلموں کی نمائش پر پابندی لگانے کا کوئی قانونی اختیار حاصل نہیں ہے۔ فلم میں کرپشن کے خلاف آگاہی پیدا کی گئی جبکہ اس میں کوئی ایسی چیز نہیں دکھائی گئی جس سے معاشرے میں انتشار پیدا ہو لہذاٰ پابندی کو غیر قانونی اور کالعدم قرار دیا جائے۔

malik-post-1

وفاقی اور پنجاب حکومت کے وکلا نے جواب جمع کروانے کے لیے مہلت کی استدعا کی جس پر عدالت نے اظہار برہمی کرتے ہوئے ریمارکس دیے کہ سرکاری وکلا نے جواب تاخیر سے جمع کروانا وطیرہ بنالیا ہے۔ عدالت نے قرار دیا کہ بادی النظر میں فلم پر پابندی آرٹیکل 19 کی خلاف ورزی ہے۔ عدالت نے کیس کی سماعت 19 مئی تک ملتوی کرتے ہوئے حکومت کو ہر صورت جواب داخل کروانے کی ہدایت کر دی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں