The news is by your side.

Advertisement

دبئی: دوشیزہ سے جبراً بدفعلی کروانے کے جرم میں بنگلادیشی خاتون کو سزا

ابوظہبی : دبئی کی عدالت نے بنگلادیشی دوشیزہ کو جعلی کاغذات کے ذریعے دبئی اسمگل کرنے اور  زبردستی مکروہ فعل انجام دلوانے کے جرم میں بنگلادیشی خاتون کو ساتھی سمیت کو 5 برس قید کی سزا سنادی۔

تفصیلات کے مطابق متحدہ عرب امارات کی عدالت نے انسانی اسمگلنگ کیس کی سماعت کرتے ہوئے دبئی میں ملازمت کرنے والی بنگلا دیشی خاتون اور اس کے ایک ساتھی کو دوشیزہ کو جبراً بد فعلی کروانے پر سزا سناتے ہوئے جیل بھیجنے کا حکم دے دیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ بنگلا دیشی خاتون نے اپنے 34 سالہ اور 27 سالہ دو بنگلا دیشی ساتھیوں کی مدد سے کم عمر لڑکی کو جعلی کاغذات کے ذریعے عمان پہنچایا اور وہاں سے گاڑی میں بیٹھا کر دبئی منتقل کیا تھا۔

دبئی پولیس کا کہنا تھا کہ ملزم خاتون نے متاثرہ لڑکی کو دبئی منتقل کرنے کے بعد ایک فلیٹ میں قید کردیا جہاں متاثرہ لڑکی سے زبردستی بد فعلی کروائی جاتی تھی۔

عربی میڈیا کا کہنا تھا کہ مذکورہ بنگلا دیشی خاتون کو گذشتہ ماہ دسمبر میں گرفتار کرکے عدالت کے سامنے پیش کیا گیا تھا، عدالت میں خاتون اور اس کے ساتھیوں پر جعلی کاغذات کے ذریعے دوشیزہ کو دبئی لانے، اسے قید کرنے اور جبراً بد فعلی کروانے کے مقدمات کے تحت سزا سنائی ہے۔

عدالتی دستاویزات کے مطابق خاتون کو  ساتھی سمیت  5 برس قید اور کی سزا سناتے ہوئے جیل منتقل کرنے کا حکم سنایا جبکہ  دیگر مجرمان کو صرف 1، 1 لاکھ درہم جرمانہ ادا کرنے کا حکم دیا۔

پولیس کا کہنا تھا کہ تینوں مجرمان کو سزا مکمل ہونے کے بعد ملک بدر کردیا جائے گا، متاثرہ دو شیزہ خاتون کی بہن کی سوتیلی بیٹی تھی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں