The news is by your side.

Advertisement

پائلٹس لائسنس اسکینڈل کا مرکزی ملزم گرفتار

کراچی: جعلی پائلٹ لائسنسز اجرا اسکینڈل میں بڑی پیش رفت ہوئی ہے، ایف آئی اے کارپوریٹ کرائم سرکل نے مرکزی ملزم کو گرفتار کر لیا۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق ایف آئی اے نے جعلی پائلٹ لائسنسز اجرا کیس کے مرکزی ملزم سید عدیل آفتاب کو گرفتار کر لیا، ملزم سی اے اے لائسنسنگ برانچ میں اسسٹنٹ ہے۔

ملزم نے ساتھیوں کے ساتھ مل کر جعلی لائسنس جاری کر کے 1 کروڑ 55 لاکھ روپے وصول کیے، ایف آئی اے نے عدیل سمیت 8 ملزمان کے خلاف نیا مقدمہ بھی درج کر لیا۔

سول ایوی ایشن اتھارٹی کے ایڈیشنل ڈائریکٹر لائسنسنگ محمد اعظم بھی نئے مقدے میں نامزد کیے گئے ہیں، ڈائریکٹر ایف آئی اے عامر فاروقی نے بتایا کہ محمد اعظم نے ترقی کے لیے خود کو بھی امتحان میں پاس کیا۔

پاکستان میں پائلٹ لائسنس اور امتحانات کیلئے برطانوی سسٹم نصب کرنے کی تیاری مکمل

ڈائریکٹر ایف آئی اے کے مطابق عمار نامی ایک پائلٹ کو بھی ایف آئی آر میں نامزد کیا گیا ہے۔

ڈپٹی ڈائریکٹر عبد الرؤف شیخ کے مطابق نئی ایف آئی آر میں مجموعی طور پر 8 ملزمان نامزد کیے گئے ہیں، جب کہ مرکزی ملزم عدیل اسکینڈل میں پہلے سے درج 3 مقدمات میں بھی نامزد ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز سول ایوی ایشن اتھارٹی کی جانب سے منسوخ شدہ لائسنسز کی بحالی کے لیے نظر ثانی بورڈ قائم کیا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں