The news is by your side.

صحت مند جسمانی وزن کیسے برقرار رکھیں؟

صحت کے بہت سارے معاملات میں ایک اہم معاملہ صحت مند جسمانی وزن کو برقرار رکھنے کا مسئلہ بھی شامل ہے۔

ہم یہاں طبی ماہرین کے بنائے گئے مختلف چارٹس سے اہم نکات پیش کر رہے ہیں، جن کی مدد سے آپ کو بھی یہ آگاہی حاصل ہو سکتی ہے کہ جسمانی وزن کو کس طرح صحت مند رکھا جا سکتا ہے۔

یہاں درج ہیں بچوں اور نوجوانوں کے لیے صحت مند زندگی گزارنے کے لیے اہم نکات:

ماہرین اگر بار بار یہ کہتے ہیں کہ اچھی غذا کھائیں اور ہمیشہ چست رہیں، تو وہ یہ اہم بات بھی کہتے ہیں کہ صحت مند طرز زندگی کے لیے اپنے متعلق اچھی سوچ رکھنا بھی ضروری ہے۔

ماہرین نے 4 اہم نکتے بیان کیے ہیں جو آپ کا صحت مند وزن برقرار رکھنے میں آپ کی مدد کر سکتے ہیں:

  1. ہمیشہ چست اور مستعد رہیے
  2. کھانے کے صحت مندانہ طریقے اپنایئے
  3. کھانے کے لیے صحت بخش غذا کا انتخاب کیجیے
  4. اپنے متعلق اچھا محسوس کیجئے

چستی اور مستعدی

ہر موسم میں چست رہنے کی کوشش کیجئے، جم کی کلاس میں حصہ لیں، جسمانی ورزش کو بڑھا کر 30 منٹ روزانہ سے شروع کیجئے۔

اپنے طبی معالج یا ڈاکٹر سے مشورے کے بعد20 سے 30 منٹ تک سخت ورزش اور 90 منٹ تک مستعد جسمانی عمل ہفتے میں 4 سے 5 مرتبہ کرتے رہیں۔

کسی بھی وقت ورزش کر سکتے ہیں، اس سے آپ بور ہونے سے بچے رہیں گے، ایسی ورزش کریں جو آپ اپنے ارد گرد کے ماحول یا گھر میں بھی کر سکیں، اس کے ساتھ ٹی وی دیکھنے کے وقت کو 90 منٹ یا اس سے بھی کم کر دیں، اور اسے کم کر کے تیس منٹ روزانہ پر لے آئیں۔

کھانے کا صحت مندانہ طریقہ

دن میں 3 مرتبہ کھانا کھائیں، کوئی کھانا مت چھوڑیں، خاص طور پر ناشتا ضرور لیں، اگر کھانے کے وقفے کے دوران بھوک ستائے تو صحت بخش اسنیک لیں۔ اس دوران دہی، پھل، سبزیاں، گندم کے کریکرز پنیر کے ساتھ لیے جا سکتے ہیں، ایک سے تین تک صحت بخش اسنیک لینا اچھی بات ہے۔

کھانا کھاتے وقت اپنی توجہ دوسری طرف نہ رکھیں، ٹی وی، کھلونے، اور گھر کے کام سے پرہیز کریں، اور اچھی طرح سے یعنی چبا کر کھائیں، سب سے اہم بات یہ کہ باہر کے کھانے کی نسبت گھر میں کھانے کو ترجیح دیں۔

ہمیشہ صحت بخش غذا کا انتخاب

مشروبات: پانی بہترین مشروب ہے، اس کے علاوہ آپ شکر سے پاک مشروب پی سکتے ہیں، دودھ خالص استعمال کریں۔

سبزیاں اور پھل: جوس یا خشک اور ڈبے کے پھلوں کی بجائے تازہ پھل اور سبزیاں کھائیں، جوس ایک گلاس روزانہ سے زیادہ نہ پیئں۔ ایسے ڈبے والے پھل کھائیں جو شیرے کی بجائے جوس میں ہوں۔ سبزیوں کا ذائقہ اچھا بنانے کے لیے لیموں کا رس اور مسالے استعمال کریں۔

اناج سے بنی اشیا: پوری اناج سے بنی ہوئی روٹی استعمال کریں، اناجی سیریل کا استعمال بھی اچھا ہے، میٹھے سیریل یا گرینولا کا استعمال نہ کریں۔

دودھ اور اس کا بدل: تازہ اور خالص دودھ کا کوئی نعم البدل نہیں، تاہم پنیر میں ایسا پنیر لیں جس میں 20 فی صد دودھ کی چربی ہو، ٹیبل کریم، وپ آئس کریم کی بجائے ٹھنڈا دودھ، جیلاٹو، فروزن دہی کا استعمال کیجیے، کم چربی والی اشیا استعمال کریں۔

گوشت: کولہے اور گول بوٹی والا گوشت، پتلا گوشت کھائیں، گوشت پر جتنی چربی نظر آئے اسے اتار دیں، مرغی اور ٹرکی کی کھال اتار کر کھائیں۔ ٹونا اور دوسری کین والی مچھلی تیل کی بجائے پانی والی استعمال کیجیے۔ گریوی اور چٹنیوں کا استعمال کم کر دیں، دالیں، سویا بین، اور ٹوفو پروٹین کا بہترین ذریعہ ہیں۔

اپنے متعلق اچھا محسوس کیجئے

ضیافت: صحت مند طرز زندگی میں ضیافت کا بڑا حصہ ہے، کبھی کبھی متوازن غذا کھانے کے لیے اپنی ہی ضیافت کرنا ضروری ہے، اس سے آپ اچھا محسوس کریں گے، تاہم صحت بخش ضیافت کا انتخاب ضروری ہے، خاص خاص مواقع جیسے چھٹی کا دن، پاٹی پر استثنیٰ حاصل ہے۔

یہ یاد رکھیں کہ صحت مند جسم مختلف شکل اور سائز کے ہو سکتے ہیں، مثبت تبدیلیاں کر کے اپنے طرز زندگی کو بدلیے، ہر وقت اپنا وزن نہ کرتے رہیں، اور ہمیشہ ایک اسکیل یا پیمانا استعمال کریں، اور ہاں، اپنی کوششوں پر اپنے آپ کو انعام دیجیے کیوں کہ آپ اس کے حق دار ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں