The news is by your side.

Advertisement

قتل کا ایک اورمقدمہ: مجید اچکزئی دو روزہ ریمانڈ پرپولیس کے حوالے

کوئٹہ : ٹریفک سارجنٹ کو کچلنے والے ایم پی اے مجید اچکزئی کے خلاف تیسرا مقدمہ سامنے آگیا۔ انیس سو بانوے میں درج ہونے والے قتل کے مقدمے میں پولیس نے گرفتار ایم پی اے کا ریمانڈ حاصل کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق کوئٹہ کے جی پی او چوک پر فرائض انجام دینے والے ٹریفک سارجنٹ سب انسپکٹرحاجی عطااللہ کے قتل کے مقدمے میں ملوث ایم پی اے مجید اچکزئی پر پچیس سال پرانے قتل کا ایک اور مقدمہ کھل گیا۔

مجیداچکزئی کوجوڈیشل مجسٹریٹ فائزہ بختاور کی عدالت میں پیش کیا گیا، پولیس نےسول تھانہ کوئٹہ میں انیس سوبانوے میں درج قتل اقدام قتل کے مقدمےمیں ایم پی اے کادو روزہ ریمانڈ حاصل کرنے کی استدعا کی جسے عدالت نے منظورکرلیا۔


بلوچستان اسمبلی کےرکن مجیدخان اچکزئی گرفتار


مجید اچکزئی کے وکیل نے مقدمےکو سازش قرار دیا ہے، ٹریفک سارجنٹ کو کچلنے کے بعد مجید اچکزئی کےخلاف سامنےآنے والایہ تیسرامقدمہ ہے۔


 ایم پی اے مجید اچکزئی کی صحافیوں سے بد تمیزی


پولیس نے حادثے کے بعد پہلے ڈرائیور کو گرفتار کرکے گاڑی قبضے میں لینے کا دعویٰ کیا تھا مگر مقدمہ نامعلوم افراد کے خلاف درج کیا گیا تھا۔


گرفتار ایم پی اے مجید اچکزئی کیلیے روم کولر، مشروبات 


واضح رہےکہ عبدالمجید اچکزئی 2013 کے عام انتخابات میں ضلع قلعہ عبداللہ کی سیٹ پی بی-13 سے رکن صوبائی اسمبلی منتخب ہوئے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں