The news is by your side.

Advertisement

نوشکی: ایک شخص کے 54 بچے، مردم شماری کا عملہ حیران

کوئٹہ: بلوچستان کے ضلع نوشکی میں ایک شخص کے 54 بچے اور چھ بیویاں ہونے کا انکشاف ہوا جس میں سے دو بیویاں اور بارہ بچے انتقال کرچکے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق مردم شماری کی ٹیم کو اس وقت حیرانگی کا سامنا ہوا جب وہ لوگوں کے اندراج کے لیے نوشکی ضلع پہنچے تو وہاں ایک ایسا گھر بھی تھا جس کا سربراہ اپنے 42 بچوں کے ہمراہ رہائش پذیر تھا۔

حاجی عبد المجید 70 سال کے ہیں جو مینگل قبیلے سے تعلق رکھتے ہیں اور پیشے کے لحاظ سے ڈرائیور ہیں انہوں نے 6 شادیاں کی ہیں جن میں دو بیویاں وفات پا چکی ہیں جب کہ چار بیویاں حیات ہیں اور انہی کے ہمراہ رہتی ہیں۔

حاجی عبدالمجید کے 6 بیویوں سے 54 بچے ہوئے ان میں 12 بچے جہان فانی سے کوچ کر گئے ہیں جب کہ حیات بچوں میں 22 لڑکے اور 20 لڑکیاں اور چار بیویاں ہیں۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ اسی صوبے کے ایک اور رہائشی جان محمد خلجی کے بارے میں خیال کیا جاتا تھا کہ وہ سب سے زیادہ اولادیں رکھنے والے باپ ہیں لیکن نوشکی کے حاجی عبدالمجید نے یہ تاثر غلط ثابت کردیا ہے۔


*چھتیس بچے ہیں، خوف زدہ ہوں کوئی اندراج سے نہ رہ جائے


یاد رہے کہ جان محمد خلجی کے 36 بچے ہیں اور میڈیا میں یہ خبر آنے کے بعد سے انہیں کافی مقبولیت ملی تھی اور 33 بچوں کے مردم شماری میں اندراج کے حوالے سے ان کے خدشات بھی منظر عام پر آئے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں