The news is by your side.

Advertisement

سعودی حکومت کا انقلابی قدم، عمرہ زائرین کے دل جیت لئے

صفائی کے عمل کے بعد مسجد الحرام میں زائرین کی رہنمائی اور مشورے کے لیے روبوٹ تعینات کردئیے گئے ہیں، یہ کن خصوصیات کے حامل ہیں؟

عرب نیوز کے مطابق سعودی عرب میں مسجد الحرام اورمسجد نبوی امور کی جنرل پریذیڈنسی کی جانب سے ‘رہنما روبوٹ’ ایک نیا آغاز ہے، جسے خاص طور پر زائرین کو مشورے فراہم کرنے کے لیے ڈیزائن کیا گیا ہے۔

روبوٹ متعدد کتابوں سے معلومات حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ عرب دنیا کے اسکالرز کی جانب سے فراہم کردہ مشورے تک رسائی حاصل کرنے کے قابل ہے۔

کنگ عبدالعزیز گیٹ کے قریب واقع مسجد الحرام کے صحن میں موجود ہیں، ان کے اہم کام عبادات کی ادائیگی کے بارے میں رہنمائی کے ساتھ ساتھ عمرہ کی ادائیگی کے لیے قانونی مسائل پر فتویٰ فراہم کرنا ہے۔رہنمائی امور کے نائب صدر شیخ بدر بن عبداللہ الفریح نے عرب نیوز کو بتایا کہ روبوٹ سے عام طور پر رمضان میں عمرے سے متعلق روزانہ 100 سے 150 سوالات پوچھے جاتے ہیں انہوں نے بتایا کہ روبوٹ کے ساتھ بات چیت کرنے والے لوگوں میں سعودی، شامی، پاکستانی یا انڈین شہری ہیں۔

نمایاں خصوصیات

اس رہنما روبوٹ میں 21 انچ کی ٹچ اسکرین نصب ہے اور یہ چار پہیوں اور ایک ‘سمارٹ اسٹاپنگ سسٹم’ سے لیس ہے جو ’ہموار اور لچکدارحرکت‘ کو یقینی بناتا ہے۔

اس کے سامنے اور عقب میں کیمرے بھی ہیں جو اس کے محل وقوع کی ایک پینورام امیج، ہائی ڈیفینیشن ہیڈ فونز اورایک مائیکروفون کے ساتھ روبوٹ کو فراہم کرتے ہیں، یہ تیزرفتار فائیو جی ایچ زی وائی فائی نیٹ ورک سے منسلک ہے۔

جنرل پریذیڈنسی نے مزید بتایا کہ مسجد الحرام میں جراثیم کش روبوٹ کے علاوہ ایک ایسا روبوٹ بھی متعارف کرایا گیا ہے جو زائرین کو زمزم کا پانی فراہم کرتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں