The news is by your side.

Advertisement

ملالہ یوسفزئی کی عراق میں جنگ سے متاثرہ لڑکیوں سے ملاقات

موصل : ملالہ یوسفزئی عراقی شہر موصل پہنچ گئیں، جہاں انھوں نے جنگ سے متاثرہ لڑکیوں سے ملاقات کی اور کہا کہ موصل کی طالبہ تعلیم اور امن کی آواز بن سکتی ہیں۔

نوبل انعام یافتہ ملالہ یوسفزئی اپنی سالگرہ منانے عراقی شہر موصل پہنچ گئیں، مہاجرکیمپ میں جنگ سے متاثرہ لڑکیوں سے ملاقات کی اور ان کے ہمراہ اپنی سالگرہ کا کیک کاٹا۔

ملالہ اپنے دورے میں جنگ سے متاثرہ لڑکیوں کی تعلیم کیلئے اقدامات کاجائزہ لے رہی ہیں۔

ملالہ یوسف زئی نے جنگ سے متاثرہ لڑکیوں سے ملاقات میں بات چیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ تعلیم کے فروغ کیلئے ان کا ساتھ دینے کے لیے موصل کی طالبہ تعلیم اور امن کی آواز بن سکتی ہیں۔

خیال رہے کہ نوبل انعام یافتہ ملالہ یوسفزئی اپنے والد ضیاالدین یوسفزئی کے ہمراہ ان دنوں مشرق وسطیٰ اور افریقہ کے دورے پر ہیں۔

اس سے قبل ہائی اسکول کی تعلیم مکمل کرنے کے بعد ملالہ یوسف زئی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنا اکاؤنٹ بنایا ،جس کے بعد منٹوں میں فالووور کی تعداد لاکھوں تک جا پہنچی تھی۔

ملالہ نے اپنے ٹوئٹ میں کہا تھا کہ میں جانتی ہوں کہ دنیا بھر میں لاکھوں لڑکیاں جو اسکول نہیں جاتیں اور انکو کبھی اپنی تعلیم کو پورا کرنے کا موقع نہیں مل سکے گا۔

واضح رہے کہ ملالہ یوسف زئی کو اکتوبر 2012 میں طالبان نے اسکول وین کے اندر نشانہ بنا کر گولی ماری دی تھی ، جس کے بعد
انھیں علاج کیلئے برطانیہ منتقل کیا گیا تھا ، وہ اس کے بعد سے وہیں مقیم ہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں