مسلمان ممالک میں جمہوری نظام کو مضبوط بنانے پر توجہ دینی چاہیے: مہاتیرمحمد
The news is by your side.

Advertisement

مسلمان ممالک میں جمہوری نظام کو مضبوط بنانے پر توجہ دینی چاہیے: مہاتیرمحمد

مانچسٹر: ملائیشیا کے وزیر اعظم مہاتیر محمد نے کہا ہے کہ مسلمان ممالک میں جمہوری نظام کو مضبوط بنانے پر توجہ دینی چاہیے، اس نظام میں حکمران جوابدہ ہوتا ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے آکسفورڈ یونیورسٹی کے اسلامک سینٹر میں خطاب کرتے ہوئے کیا، مہاتیر محمد کا کہنا تھا کہ جمہوری نظام میں حکمران عوام کو جوابدہ ہوتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ مثبت تبدیلی کے لیے مائنڈ سیٹ کی تبدیلی ضروری ہے، ریاست کی ترقی حکمران کی قابلیت اور دیانتداری سے مشروط ہے۔

ملائیشیائی وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ جمہوری ثمرات عوام تک پہنچانے کے لیے قابلیت ودیانتداری ضروری ہے، عدم برداشت اور ٹانگ کھینچنے کا کلچر آمریت کی راہ ہموار کرتا ہے۔

ملائیشیا کے انتخابات میں مہاتیرمحمد کی تاریخی فتح پرعمران خان کی مبارکباد

خیال رہے کہ رواں سال مئی میں ملائیشیا کے عام انتخابات میں مہاتیرمحمد اور ان کی اتحادی جماعت نے واضح کامیابی حاصل کی تھی، جس کے بعد مہاتیر محمد ملک کے نئے وزیر اعظم بنے اور حکمراں جماعت کے اقتدار کا 60 سالہ دور ختم ہوا۔

مہاتیرمحمد اور ان کے اتحادیوں نے انتخابات میں 155 نشتیں حاصل کی تھیں، جبکہ حکومت بنانے کے لیے222 اراکین کے ایوان میں 112 نشتوں کی ضرورت ہوتی ہے۔

یاد رہے کہ 92 سالہ مہاتیرمحمد نے سیاست سے کنارہ کشی اختیار کی ہوئی تھی تاہم 2016 میں انہوں نے یہ فیصلہ تبدیل کرتے ہوئے ملائیشین یونائیٹڈ انڈیجنس پارٹی قائم کی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں