The news is by your side.

Advertisement

پاکستان نے ہمیشہ کہا ہے افغانستان کا حل فوجی نہیں، مذاکرات ہیں: ملیحہ لودھی

نیویارک: پاکستان نے افغان امن مذاکرات کی جلد بحالی پر زور دیا ہے، اقوام متحدہ میں پاکستان کی مستقل مندوب ملیحہ لودھی کا کہنا تھا کہ پاکستان نے ہمیشہ کہا کہ افغانستان کا حل فوجی نہیں، مذاکرات ہیں۔

تفصیلات کے مطابق اقوام متحدہ میں پاکستان کی مستقل مندوب ملیحہ لودھی نے سلامتی کونسل میں افغانستان پر مباحثے سے خطاب کیا۔ اپنے خطاب میں ان کا کہنا تھا کہ مذاکراتی عمل کو لگے حالیہ دھچکے سے امن کی کوششوں میں کمی نہیں آنی چاہیئے۔

ملیحہ لودھی نے کہا کہ پاکستان نے ہمیشہ کہا کہ افغانستان کا حل فوجی نہیں، مذاکرات ہیں۔ امریکا اور طالبان معاہدے کے قریب پہنچتے دکھائی دے رہے تھے۔

اپنے خطاب میں انہوں نے مزید کہا کہ افغانستان میں امن کوششوں میں پاکستان اپنا کردار ادا کرتا رہے گا۔

اس سے قبل ایک موقع پر پاکستانی مندوب کا کہنا تھا کہ پاکستان نے ہمیشہ افغانستان میں امن کے حصول کی حمایت کی ہے، عالمی برادری نے بھی پاکستان کے مثبت کردار کو سراہا ہے۔

انہوں نے کہا تھا کہ قیام امن کی کوششوں کے لیے درپیش چیلنجز کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا، تمام شراکت داروں کو مذاکرات سے دیرپا امن قائم کرتے دیکھنا چاہتے ہیں۔

ملیحہ لودھی کا مزید کہنا تھا کہ افغانستان میں امن اور استحکام خطے کے وسیع تر مفاد میں ہے، افغانستان کے مسائل کا حل فوجی مہم جوئی میں نہیں ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں