The news is by your side.

Advertisement

مالی کے قائم مقام صدر قاتلانہ حملے میں بال بال بچ گئے

بماکو: مغربی افریقی ملک مالی کے قائم مقام صدر پر مسجد میں قاتلانہ حملہ ہوا ہے۔

افریقی میڈیا کے مطابق مالی کے قائم مقام صدر کرنل اسیمی گوئتا پر 2 افراد نے چاقو سے حملے کی کوشش کی، تاہم وہ محفوظ رہے، اور ایک حملہ آور کو گرفتار کر لیا گیا۔

مالی کے حکام کا کہنا تھا کہ حملہ منگل کی صبح کو بماکو کی جامع مسجد میں عید الاضحیٰ کی نماز کے بعد ہوا، نماز عید ادا ہو گئی تھی، جس کے بعد امام بھیڑ کی قربانی کے لیے دروازے کی طرف بڑھ رہے تھے، جب اچانک دو افراد نے کرنل اسیمی پر حملہ کر دیا۔

اے ایف پی کی رپورٹ کے مطابق قائم مقام صدر کو فوری طور پر وہاں سے ہٹا دیا گیا، اور انھیں کوئی زخم نہیں آیا تھا، صدر کی سیکیورٹی سروس سے جب میڈیا نے سوال کیا کہ کیا یہ قاتلانہ حملہ تھا، تو انھوں نے جواب دیا جی بالکل، قاتلانہ حملہ تھا۔

سیکیورٹی اہل کاروں کا کہنا تھا کہ ایک شخص نے چاقو سے مسجد میں گوئتا پر حملہ کیا تھا، اس سلسلے میں تحقیقات جاری ہیں۔

مسجد میں موقع پر موجود وزیر مذہبی امور ممادو کونے نے اے ایف پی کو بتایا کہ نماز کے فوراً بعد ایک شخص نے صدر پر حملہ کیا، اس کے ہاتھ میں چاقو تھا، لیکن اس سے قبل کہ وہ نقصان پہنچاتا، اسے قابو کر لیا گیا۔

مسجد کے منتظم نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ نماز اور خطبے کے بعد امام صاحب عموماً باہر جا کر بھیڑ کی قربانی کرتے ہیں، بس اسی وقت ایک نوجوان نے کرنل اسیمی پر پیچھے سے حملہ کر دیا، لیکن اس حملے میں ایک دوسرا شخص زخمی ہوا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں