site
stats
پاکستان

کشمیر میں نسلی و مذہبی بھارتی امتیازی سلوک مسترد کرتے ہیں، ڈاکٹر ملیحہ لودھی

نیویارک: اقوام متحدہ میں پاکستان کی مستقل مندوب ڈاکٹر ملیحہ لودھی نے کہا ہے کہ کشمیر میں نسلی و مذہبی بھارتی امتیازی سلوک کو مسترد کرتے ہیں۔ مقبوضہ کشمیر میں لاکھوں افراد کا حق خودارادیت سے محروم ہونا اکیسویں صدی کا المیہ ہے۔

اقوام متحدہ میں سلامتی کونسل سے خطاب کرتے ہوئے پاکستان کی مستقل مندوب ڈاکٹر ملیحہ لودھی نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر کے حل کے بغیر جنوبی ایشیا میں پائیدار امن ممکن نہیں ہے۔ مسئلہ کشمیر کو حق خودارادیت کے عالمی قوانین کے مطابق حل ہونا چاہیئے۔

انہوں نے کشمیر میں بھارت کی جانب سے نسلی و مذہبی امتیازی سلوک کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں لاکھوں افراد کا حق خودارادیت سے محروم ہونا اکیسویں صدی کا المیہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیری عوام 70 سال سے سلامتی کونسل کی قراردادوں پرعملدر آمد کے منتظر ہیں۔

خطاب میں انہوں نے مزید کہا کہ کشمیری عوام ہر صورت بھارتی تسلط سے آزادی چاہتے ہیں۔ کشمیری جذبہ آزادی سے سرشار اور حق خودارادیت کے لیے پر عزم ہیں۔

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ پاکستان کشمیریوں کی امنگوں اور عالمی قراردادوں کے مطابق مسئلے کا حل چاہتا ہے۔ کشمیریوں کے مستقبل کے تعین میں بھارتی بربریت بڑی رکاوٹ ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top