The news is by your side.

Advertisement

مکان اورنج لائن منصوبے کی نذر، مالک کی خودکشی کی کوشش

لاہور: اورنج لائن ٹرین منصوبے کی زد میں آنے والے گھرکے مالک نے معاوضہ نہ ملنے کے سبب خودکشی کرنے کی کوشش کی تاہم اسے بروقت طبی امداد فراہم کردی گئی۔

تفصیلات کے مطابق لاہور کے رہائشی عبدالقادرکا مکان اورنج لائن ٹرین منصوبے کی زد میں آنے کے سبب توڑڈیا گیا تھا تاہم کئی ماہ گزرنے کے باوجود اسے اس کے مکان کی قیمت کی ادائیگی نہیں کی گئی۔

حکومتی رویے اور حالات سے دلبرداشتہ ہوکر عبدالقدیرنے خودکشی کی انتہائی راستہ اختیار کیا تاہم اسے بروقت طبی امداد فراہم کردی گئی۔

ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ عبدالقدیرکی حالت تاحال خطرے سے باہرنہیں آئی ہے اوراسے مصنوعی تنفس فراہم کی جارہی ہے۔

مزید پڑھیں: اورنج لائن پراجیکٹ، دو جاں بحق


اے آروائی نیوز کے بیورو چیف لاہور، عارف حمید بھٹی کے مطابق ’’اورنج لائن ٹرین منصوبے کی زد میں کئی مکانات اور لاہورکا یتیم خانہ بھی آگئے ہیں اور تاحال ادائیگیوں کے لیے کوئی طریقہ کار وضع نہیں کیا گیا اورنہ حکومت ادائیگی کے موڈ میں نظرآرہی ہے‘‘۔

ان کا کہنا تھا کہ حکمرانوں کی توجہ لاہورکے عوام کے بنیادی مسائل کے بجائے ثانوی مسائل پرمرکوز ہے۔

یاد رہے کہ اورنج میٹرو لائن کا 27 کلومیٹر طویل راستہ علی ٹاون سے شروع ہوکرڈیرہ گجراں تک تعمیر کیا جانا ہے۔ 2006 میں کیے جانے والے تحقیقی مطالعے کے تحت اس کا 20 کلومیٹر حصہ پُل کی صورت میں جبکہ تاریخی مقامات اور آبادیوں کے قریب سے گزرنے والا راستہ نقصان کی شدت کم کرنے کے لیے زیرِزمین تعمیر کیا جانا تھا۔ تاہم اب اس منصوبے کا نقشہ بھی تبدیل کر دیاگیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں