The news is by your side.

Advertisement

7 میل سفر طے کرنے کے بعد ہیلمٹ میں سے زہریلا سانپ برآمد

نئی دہلی: بھارت میں ایک ایسا خوش نصیب شخص سامنے آیا ہے جس کے ہیلمٹ میں زہریلا سانپ چھپا تھا لیکن وہ اس جان لیوا خطرے سے بے خبر  بائیک چلاتا رہا اور سانپ کے حملے سے بھی محفوظ رہا۔

بھارتی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق رانجیتھ نامی بھارتی شخص پیشے کے اعتبار سے ایک اسکول ٹیچر ہے جس نے موٹرسائیکل پر 7 میل کا فاصلہ طے کیا جس کے بعد اسے پتا چلا کہ اس کے ہیلمٹ میں ایک عدد زہریلا سانپ گھسا ہوا ہے۔

بھارتی استاد پڑھانے کی غرض سے گھر سے اسکول پہنچا جہاں اس نے کلاس ختم کی اور پھر دوسرے اسکول پڑھانے چلا گیا اس دوران مسلسل زہزیلا سانپ اس کے ہیلمٹ میں موجود تھا جس کی اسے ذرا بھی بھنک نہ لگی۔

رپورٹ کے مطابق ’کہا جاتا ہے کہ ہیلمٹ جان کی حفاظت کرتا ہے تاہم کبھی کبھی یہ جان لیوا بھی ثابت ہوسکتا ہے‘۔

بھارتی ٹیچر پڑھانے کے لیے جب دوسرے اسکول پہنچا تو اسے ہیلمٹ کے اندر ایک سانپ دیکھا بعد ازاں انہوں نے سانپ کو مار کر ہیلمٹ بھی جلا ڈالا۔ رانجیتھ کا کہنا ہے کہ اس واقعے کے فوری بعد اسپتال پہنچا جہاں ڈاکٹروں نے تصدیق کی کہ وہ سانپ کے ڈنسے جانے سے محفوظ رہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں