The news is by your side.

Advertisement

میگھن مارکل کی تصویر لینے پر ہنگامہ

لندن: برطانوی شہری نے شہزادی میگھن مارکل کی تصویر لینے کی کوشش کی تو اُسے محافظ نے روک دیا، اسٹاف کے روکنے پر لوگوں نے شاہی خاندان کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا۔

تفصیلات کے مطابق میگھن مارکل اپنی دوست کے ہمراہ سرینا ولیم کا ومبلڈن ٹینس کا مقابلہ دیکھنے پہنچی تو شائقین کی توجہ میچ کے بجائے اُن کی طرف چلی گئی۔

اسی دوران میگھن مارکل سے اگلی نشست پر بیٹھے بزرگ شہری نے اپنا موبائل نکالا اور برطانوی شہزادی کی تصویر لینے کی کوشش کی تو اُسے محافظ نے روک دیا۔

تصویر بنانے والے شہری نے کہا کہ میگھن مارکل میچ دیکھنے کے لیے شاہی خاندان کے فرد کی حیثیت سے نہیں آئیں بلکہ وہ ایک عام شائق کی طرح بیٹھی ہوئی ہیں لہذا مجھے کوئی نہیں روک سکتا۔

محافظ کے روکنے پر وہاں بیٹھے شائقین نے شدید احتجاج کیا تو محافظ نے مؤقف اختیار کیا کہ یہ عوامی مقام ضرور ہے مگر کسی کو شاہی خاندان کے فرد کی تصویر بنانے کی اجازت نہیں ہے۔

اس اقدام کے بعد میچ دیکھنے والے اسٹیڈیم میں 12 ہزار شائقین اور ٹی وی پر براہ راست مقابلہ دیکھنے والوں نے میگھن اور اُن کے اسٹاف کے رویے پر شدید تنقید کی اور سوال اٹھایا کہ آخر کیوں اُن کی تصاویر نہیں لی جاسکتیں؟

اس تمام تر صورتحال کے باوجود میگھن مارکل اپنی دوست کے ساتھ مل کر نہ صرف میچ دیکھنے میں مگن رہیں بلکہ وہ اس واقعے کو کسی خاطر میں نہ لائیں جس پر عوام کا غصہ مزید بڑھ گیا۔

میگھن مارکل کی دوست ایم ایس جونس نے برطانوی نشریاتی ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سیکیورٹی محافظ کو اس طرح سے نہیں روکنا چاہیے تھا اگر کسی نے تصویر لینے کی درخواست کی تو اُسے مکمل اجازت ہونی چاہیے۔

دوسری جانب شاہی خاندان کے ترجمان نے اس اقدام پر عوام سے معافی بھی مانگ لی اور کہا کہ عوام اور شاہی خاندان کے فرد میں صرف سیکیورٹی کا فرق ہے باقی سب ملکہ برطانیہ کی نظر میں ایک ہی ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں