The news is by your side.

کرکٹ میں آئیڈیل کون؟ شعیب اختر نے بتادیا

مانچسٹر: پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق فاسٹ بولر شعیب اختر نے قومی ٹیم کی مڈل آرڈر پر ایک بار پھر سوالات اٹھادئیے۔

تفصیلات کے مطابق مانچسٹر میں گفتگو کرتے ہوئے شعیب اختر نے کہا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ کی از سر نو تشکیل کی ضرورت ہے، پی سی بی کو کارپوریشن کی طرح چلانے کی ضرورت ہے، اس طریقے سے ہم بہت پیسہ کماسکتے ہیں۔

راولپنڈی ایکسپریس کا کہنا تھا کہ میں سیدھی بات کرتا ہوں جو لوگوں کو پسند نہیں آتی ، اگر میں چیئرمین پی سی بی بنا تو متاثر کُن کارکردگی دکھانے والے کھلاڑی ہی آگے آئیں گے۔

ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ میں ٹیم کی سلیکشن سے متعلق انہوں نے کہا کہ پاکستان میں جو سلیکشن کا میرٹ ہے، اگر اُس مڈل آرڈر کے ساتھ ورلڈ کپ میں گئے تو مارے جائیں گے۔

شعیب اختر نے بتایا کہ میرے آئیڈیل وقار یونس تھے، میں ان سے کرکٹ سیکھتا تھا جبکہ کرکٹ کھیلنے کا شوق عمران خان کو دیکھ کر پیدا ہوا، میری خواہش تھی کہ زیادہ سے زیادہ تیز بولنگ کروں جس پر لوگ کہتے تھے کہ تیز بولنگ کراؤ گے تو تمہارے گھٹنے ٹوٹ جائیں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں