The news is by your side.

Advertisement

سندھ میں 18 سال کے نوجوانوں کی لازمی شادی کرانے کا بل جمع

کراچی : سندھ میں 18 سال کے نوجوانوں کی لازمی شادی کرانے کا بل جمع کرادیا گیا، جس میں نوجوانوں کی شادی نہ کروانے والے والدین پر 500 روپے جرمانہ عائد کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ میں18 سال کے نوجوانوں کی لازمی شادی کرانے کا بل جمع کرادیا گیا ، ایم پی اے ایم ایم اے سید عبدالرشید نے مسودہ قانون اسمبلی سیکریٹریٹ میں جمع کرایا۔

بل 2صفحات پرمشتمل ہےجسےسندھ لازمی شادی ایکٹ 2021 کا نام دیا گیا ہے ، بل میں نوجوانوں کی شادی نہ کروانے والےوالدین پر 500روپے جرمانہ عائد کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔

مسودہ قانون میں کہا گیا ہے کہ سندھ حکومت یقینی بنائےکہ والدین اپنےعاقل بچوں کی لازمی شادی کرائیں، اگر والدین تاخیرکرتےہیں تو ڈپٹی کمشنرکوتحریری طورپرآگاہ کرناہوگا۔

ایم پی اے ایم ایم اے سید عبدالرشید کا کہنا ہے کہ معاشرےکی فلاح کےلئےقانون تجویزکیاہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں