The news is by your side.

Advertisement

مشہور شاعر کو بجلی کا 36 لاکھ روپے سے زائد رقم کا بل موصول

پاک و ہند میں‌ اپنی مزاحمتی شاعری اور ترنّم کے لیے مشہور منظر بھوپالی کو گزشتہ دنوں بجلی کے بھاری بل کی صورت میں ‘زبردست جھٹکا’ لگا ہے۔ بھارت کے اس معروف شاعر کو بجلی محکمے نے 36 لاکھ 86 ہزار 660 روپے کا بل بھیجا ہے۔

بجلی کا ‘بھاری بھرکم’ بل موصول ہونے کے بعد منظر بھوپالی نے اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹ پر ایک پوسٹ میں‌ شیوراج سنگھ چوہان کی حکومت پر طنز کیا ہے، انھوں‌ نے ٹوئٹر پر لکھا، “وزیر اعلیٰ شیوراج سنگھ کورونا کے دور میں ایسا مذاق شاعر کے لیے ٹھیک نہیں۔ لاک ڈاؤن اور کورونا کی وجہ سے شاعر کے قلم کی سیاہی سوکھ گئی ہے۔ یہ بل رشوت خوری اور کرپشن کا کھلا دعوت نامہ ہے۔ منظر بھوپالی نے اس پوسٹ کے ساتھ اپنی ایک تصویر بھی شیئر کی ہے جس میں انھوں نے اپنے ہاتھوں میں‌ بجلی کا بل تھاما ہوا ہے۔

بھوپال سے تعلق رکھنے والے اس شاعر کا اصل نام سید علی رضا اور تخلص منظر ہے۔ ان کا شعری سفر تین دہائیوں پر محیط ہے، وہ بھارت ہی نہیں‌ دنیا بھر میں منعقدہ مشاعروں میں شرکت کرکے اپنے کلام اور ترنم کی داد وصول کرچکے ہیں۔

منظر بھوپالی کراچی میں‌ منعقدہ عالمی مشاعرے میں بھی متعدد بار شرکت کرچکے ہیں۔ ان کی ایک مشہور غزل ملاحظہ کیجیے۔

اونچے اونچے ناموں کی تختیاں جلا دینا
ظلم کرنے والوں کی وردیاں جلا دینا

در بدر بھٹکنا کیا دفتروں کے جنگل میں
بیلچے اٹھا لینا ڈگریاں جلا دینا

موت سے جو ڈر جاؤ زندگی نہیں ملتی
جنگ جیتنا چاہو کشتیاں جلا دینا

پھر بہو جلانے کا حق تمھیں پہنچتا ہے
پہلے اپنے آنگن میں بیٹیاں جلا دینا

Comments

یہ بھی پڑھیں