The news is by your side.

Advertisement

“منظور پشتین گرفتاری، افغان صدر کا بیان پاکستان کے اندرونی معاملات میں مداخلت ہے”

اسلام آباد: پاکستان نے منظور پشتین کی گرفتاری پر افغان صدر اشرف غنی کی ٹوئٹ پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغان صدر کا بیان پاکستان کے اندرونی معاملات میں واضح مداخلت ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے منظور پشتین کی گرفتاری پر افغان صدر کے بیان پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ اشرف غنی کی حالیہ ٹوئٹ پر شدید تشویش ہوئی۔

ترجمان نے کہا کہ افغان صدر کا بیان پاکستان کے اندرونی معاملات میں واضح مداخلت ہے ایسے بیان دونوں ملکوں میں دوستانہ تعلقات کےفروغ میں معاون نہیں ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان افغانستان سے عدم مداخلت کےاصولوں پرتعلقات رکھنا چاہتاہے اور پاکستان افغانستان سے قریبی اور خوشگوار تعلقات قائم رکھنے کا خواہشمند ہے.

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ خطے میں استحکام کے مشترکہ مقصد کیلئے مل کر کام کرناچاہتے ہیں۔

واضح رہے کہ ملک میں انتشار پھیلانے اور تخریب کاری کے الزام میں منظور پشتین کو گرفتار کر کے عدالت پیش کیا گیا تھا، عدالت نے ملزم کو 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا ہے۔

منظور پشتین کی گرفتاری پر افغان صدر نے تشویش کا اظہار کیا حالانکہ مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی جبری پابندیوں کو 5 ماہ سے زائد وقت گزرنے کے باوجود افغان صدر کی جانب سے کوئی تشویش یا مذمت کا اظہار نہیں کیا گیا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں