site
stats
پاکستان

جی آئی ٹی تو بن گئی لیکن نوازشریف کے لئے جولائی خطرناک مہینہ ہے، منظور وسان

سکھر: صوبائی وزیر منظور وسان نے کا کہنا ہے کہ جی آئی ٹی تو بن گئی ہے لیکن نوازشریف کے لئے جولائی خطرناک مہینہ ہے کچھ لوگ گھر جائیں گے تو کچھ لوگ تبدیل بھی ہو سکتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سکھر میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے صوبائی وزیر انڈسٹری منظور وسان کا کہنا تھا کہ جولائی میں اہم فیصلے ہونے ہیں ، نواز شریف نے بھارتی بیوپاری سے خفیہ ملاقات کر کہ شق و شبہات بڑھا دیئے ہیں۔

منظور وسان نے کہا کہ پاناما اسکینڈل کے حوالے سےجی آئی ٹی تو بن گئی ہے لیکن نوازشریف کے لئے جولائے خطرناک ماہ ہے کچھ لوگ گھر جائیں گے تو کچھ لوگ تبدیل بھی ہو سکتے ہیں ۔

انھوں نے کہا کہ سی سی آئی اجلاس میں وزیر اعلی سندھ کی بات سنے بغیر جلسے میں چلے گئے، وفاق سندھ کی گیس پنجاب کو دے کرسندھ کو ایل این جی خریدنے کے بھاشن دی رہا ہے، 18وین ترمیم کے تحت گیس پیداوار کرنے والے صوبے کا پہلے حق ہے، نواز شریف حکومت چھوٹے صوبوں کے ساتھ زیادتی نہیں کرنی چاہئے۔

منظوروسان نے کہا کہ  ہم جمہوریت کو چلتے دیکھنا چاہتے ہیں اوردوہزاراٹھارہ میں الیکشن چاہتے ہیں۔


مزید پڑھیں : پندرہ جون سے جولائی تک میاں نواز شریف وزیراعظم نہیں رہیں گے، منظور وسان


یاد رہے گزشتہ ماہ منظوروسان کا کہنا تھا کہ پانامہ لیکس پر فیصلہ آنے کے بعد نواز شریف کا کاونٹ ڈاوٴن شروع ہوگیا ہے، پندرہ جون سے جولائی تک عوامی احتجاج کے بعد نواز شریف وزیر اعظم نہیں رہیں گے۔

انھوں نے کہا کہ نواز شریف خود  استعفی دینگے اور دوسرا وزیر اعظم  آئے گا، حالات کو دیکھتے ہوئے آہستہ آہستہ فیصلے آئیں گے، پہلے  کہا تھا کہ نواز شریف رہے گا اور ڈینٹ پڑ ے گا اور وہ ہوگیا۔

اس سے قبل پیپلزپارٹی کے رہنما اور اپنے خوابوں سے مشہور صوبائی وزیر سندھ منظور وسان نے کہا تھا کہ اپریل شہادتوں کا مہینہ رہا ہے اسی ماہ سیاست کروٹ بدلے گی اور اپریل کے بعد پی پی اور ن لیگ کا اصل سیاسی میچ شروع ہوگا، بھٹو کا تیر چلے گا تو شیر اور پتنگ کہیں نظر نہیں آئیں گے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top