The news is by your side.

Advertisement

مردان خودکش دھماکہ، ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ مکمل

پشاور : مردان خودکش دھماکے کی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ کے مطابق حملہ آور غیر ملکی افغانی تھا، حملہ آور کی عمر تیس سے پینتیس سال تھی جبکہ خود کش جیکٹ میں آٹھ کلو بارودی مواد اور بال بیرنگ تھے۔

تفصیلات کے مطابق مردان میں خودکش دھماکے کے بعد فضا آج بھی سوگوار اور ہر آنکھ اشکبار ہے، سیکیورٹی اداروں نے دھماکے کی ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ مکمل کرلی ہے، رپورٹ کے مطابق حملہ آور غیر ملکی افغانی تھا۔

blast

پولیس حکام کے مطابق خودکش حملہ آور کی عمر تیس سے پینتیس سال تھی، حملہ آور پیدل تھا اور اس کے پاس ایک دستی بم بھی تھا جبکہ خودکش حملہ آور کے جیکٹ میں آٹھ کلو بارودی مواد اور بال بیرنگ تھے۔

خود کش حملے کا مقدمہ مردان سی ٹی ڈی میں گزشتہ رات نامعلوم افراد کیخلاف درج کر لیا گیا تھا۔

دوسری جانب اے آر وائی نیوز نے مردان دھماکے کی سی سی ٹی وی فوٹیج حاصل کرلی ہے، فوٹیج میں خود کش حملہ آورکو دستی بم پھینکتے ہوئے اور فائرنگ کرتے ہوئے دیکھا جاسکتا ہے۔


 مزید پڑھیں :  مردان میں خودکش دھماکہ،12افراد جاں بحق


یاد رہے کہ مردان کچہری میں خود کش دھماکے میں تین پولیس اہلکاروں اور چار وکلاء سمیت چودہ افراد جاں بحق اور چالیس سے زائد زخمی ہوئے تھے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں