The news is by your side.

Advertisement

خاتون پیرالمپکس نے ڈاکٹرز کے ہاتھوں اپنی زندگی کا خاتمہ کرلیا

برسلز : ماریکے پٹھوں کی ایسی بیماری میں مبتلا تھیں جس کے باعث انہیں شدید درد رہتا تھا ان کی ٹانگیں مفلوج اور حالت بگڑتی جا رہی تھی۔

تفصیلات کے مطابق بیلجیئم کی پیرالمپئن ماریکے فیرفورٹ نے چالیس سال کی عمر میں ڈاکٹر کے ہاتھوں اپنی زندگی کا خاتمہ کر لیا ہے، وہ لندن میں 2012 کے پیرالمپکس میں سونے اور چاندی کے تمغے جیت چکی ہیں جبکہ ریو 2016 میں بھی خاتون کھلاڑی نے دو میڈل جیتے تھے۔

غیر ملکی میڈیا کا کہنا تھا کہ انہیں پٹھوں کی ایک ایسی بیماری لاحق تھی جس میں انہیں شدید درد رہتا تھا، ان کی ٹانگیں مفلوج تھیں اور ان کی حالت بگڑتی جا رہی تھی۔

ماریکے فیرفورٹ نے اپنی حالت کے مدنظرسنہ 2008 میں ایک دستاویز پر دستخط کیے کرکے خود یہ فیصلہ کیا تھا کہ ایک وقت آئے گا جب وہ دوسروں پر بوجھ بننے کی بجائے اپنی موت کو ترجیح دیں گی۔

واضح رہے کہ یورپ کے کئی ملکوں میں یوتھنیسیا یا ڈاکٹر کی مدد سے زندگی کا خاتمہ ایک متنازعہ عمل ہے جس کی اجازت نہیں لیکن بیلجیم کے قوانین اس کی اجازت دیتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں