site
stats
سائنس اور ٹیکنالوجی

مارک زکر برگ کا صومالی مہاجر خاندان کے ساتھ افطار

سانس فرانسسکو: فیس بک کے بانی مارک زکر برگ نے مینی سوٹا کے شہر مینا پولس میں مقیم صومالی مہاجرین کے گھر پر افطاری کی۔

مارک زکر برگ کی پوسٹ کے مطابق انہیں صومالیہ کے پناہ گزین خاندان نے افطاری پر مدعو کیا جو گزشتہ 26 سال سے امریکا کے ریلیف کیمپ میں اپنی زندگی بسر کررہا ہے۔

فیس بک کے بانی مہاجر خاندان کی دعوت پر 23 جون کو اُن کی رہائش گاہ افطار کے لیے پہنچے، مارک زکر برگ کی موجودگی سے مہاجر خاندان میں خوشی کی لہر دوڑ گئی اور انہوں نے فیس بک کے بانی کا شکریہ بھی ادا کیا۔

مارک زکر برگ نے افطار کی تصویر اپنے فیس بک اکاؤنٹ پر شیئر کی جسے اب تک سیکڑوں لوگ پسند کرچکے ہیں اور تقریبا اتنی ہی تعداد میں لوگوں نے کمنٹس کر کے اپنے خیالات کا اظہار بھی کیا۔

اپنی فیس بک پوسٹ میں مارک زکر برگ نے ’’مہاجر صومالی خاندان کا شکریہ ادا کیا اور لکھا کہ پناہ گزینوں کی جدوجہد اور زندگی نے ایک نئی ہمت پیدا کی،  پناہ گزین ایک انجان مقام پر کس طرح نئی زندگی کا آغاز کرتے ہیں یہ بہت متاثر کن بات ہے‘‘۔

انہوں نے کہا کہ مہاجر کیمپ میں رہنے والے شخص سے جب پوچھا کہ ’’کسی بھی پناہ گزیں نے پاس یہ پسند نہیں ہوتی کہ اب وہ کس نئے مقام پر منتقل ہوگا اور وہاں کے حالات کیسے ہوں گے؟‘‘۔

مارک زکر برگ کا کہنا ہے کہ مہاجر شخص کے مختصر جواب نے مجھے بہت متاثر کیا اور کہا کہ ’’کیمپ میں رہنے والے تمام ہی لوگ اب امریکا کو ہی اپنا گھر سمجھتے ہیں‘‘۔

پڑھیں: امریکا مہاجرین کی سرزمین ہے، ٹرمپ فیصلوں‌ پر نظر ثانی کریں، مارک زکربرگ

یاد رہے ٹرمپ کی جانب سے امریکا میں مہاجرین کے داخلے پر پابندی کے اعلان پر فیس بک بانی نے کھل کر مخالفت کرتے ہوئے امریکی صدر کا آئینہ دکھایا تھا، مارک زکربرگ نے کہا تھا کہ اُن کا خاندان بھی مہاجر تھا مگر اب وہ امریکا سے بہت پیار کرتے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top