The news is by your side.

Advertisement

گلگت: امریکی شکاری کا ایک لاکھ ڈالر کے عوض مارخور کا شکار

گلگت: امریکی شہری نے گلگت بلتستان میں قانونی شکار کے تحت 1 لاکھ ڈالر فیس کے عوض مارخور شکار کر لیا۔

تفصیلات کے مطابق امریکی شہری جان ایمسٹوسو نے گلگت بلتستان میں استور کے مقام پر مارخور کا شکار کھیلا، یہ استور کے مقام پر پہلی ہنٹنگ ٹرافی ایوارڈ کا انعقاد تھا۔

فیس کی رقم سے 80 ہزار ڈالر مقامی کمیونٹی، جب کہ 20 ہزار ڈالر حکومت کو ملیں گے۔

محکمہ وائلڈ لائف

ذرائع محکمہ جنگلات نے بتایا کہ شکاری جان ایمسٹوسو نے مارخور کے شکار کے لیے 1 لاکھ ڈالر فیس ادا کی ہے۔

ذرائع نے کہا ہے کہ فیس کی رقم سے 80 ہزار ڈالر مقامی کمیونٹی، جب کہ 20 ہزار ڈالر حکومت کو ملیں گے۔ خیال رہے کہ مارخور کے شکار کے لیے ٹرافی ہنٹنگ کے نام پر حکومت کی جانب سے شکار کا پرمٹ جاری کیا جاتا ہے۔

مارخور کے شکار کی قیمت ایک کروڑ سے ڈیڑھ دو کروڑ تک ہو سکتی ہے، ہر سال مارخور کی شکار کے لیے ہنٹنگ ٹرافی کے لیے بین الاقوامی سطح پر بولی ہوتی ہے، جو شکاری سب سے زیادہ بولی دیتا ہے اسی کو شکار کا لائسنس دے دیا جاتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  پاکستان میں پرندوں کا شکار، امریکی ڈالرز میں فیس مقرر

یاد رہے کہ چھ جنوری کو چترال کے گول نیشنل پارک میں ایک مارخور غیر قانونی شکار کے دوران زخمی ہوکر دریا میں گر کر ہلاک ہوگیا تھا، شکاری کی نشان دہی کرلی گئی ہے تاہم جرم ثابت ہونے پر اسے محض چند ہزار روپے جرمانہ ادا کرنا ہوگا۔

واضح رہے کہ مارخور پاکستان کا قومی جانور ہے جو کہ مغربی کوہِ ہماليہ ميں اپنا ٹھکانہ رکھتا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں