The news is by your side.

Advertisement

شریف خاندان نے جو دستاویزات جمع کرائی ہیں وہ اصلی اور تصدیق شدہ ہیں، مریم اورنگزیب

اسلام آباد : وزیراطلاعات مریم اورنگزیب نے ایک بار پھر یقین سے کہا کہ شریف خاندان نے جو دستاویزات جمع کرائی ہیں وہ اصلی اور تصدیق شدہ ہیں جبکہ دانیال عزیز کا کہنا ہے کہ شریف خاندان کا میڈیا ٹرائل جاری ہے،بس تماشا لگا رکھا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اعلٰی عدلیہ میں رسوائی کے باوجود مسلم لیگی رہنماؤں کی میں نہ مانوں کی رٹ برقرار ہے، وفاقی وزیراطلاعات مریم اورنگزیب نے ایک بار پھر یقین سے کہا کہ شریف خاندان نےجو دستاویزات جمع کرائی ہیں وہ اصلی اور تصدیق شدہ ہیں، عمران خان الیکشن کمیشن اورعدالتوں میں پیش نہیں ہوتے۔

مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ آج اگر سماعتیں دیکھیں تو کیس وہیں کھڑا ہے ، جے آئی ٹی پر شریف فیملی کو تحفظات آج بھی ہیں، کرپشن نہ کرنے والا ہی خود کو احتساب کے لیے پیش کرسکتا ہے‌۔

انھوں نے کہا کہ مخالفین نے پاناماکیس کوسیاسی بیساکھی کے طور پراستعمال کرنے کی کوشش کی، وزیراعظم کے خلاف مقدمہ کرپشن نہیں اقتدار کی ہوس کا تھا۔

وفاقی وزیراطلاعات کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نے قانون کی پاسداری کے لیے خود کو اور قانون کو پیش کیا، اقتدار کی ہوس میں روز شام کو تماشہ لگایا جاتا ہے، خیبرپختونخوا احتساب سیل کو لگایاجانے والا تالا عمران خان کو اپنے منہ پر لگالینا چاہیے ۔

نواز شریف کے خلاف ثبوت ہے ہی نہیں تو ٹرائل میں کیا ہوگا، بس تماشا لگا رکھا ہے، دانیال عزیز

مسلم لیگ کے رہنما دانیال عزیز کا کہنا ہے کہ شریف خاندان کا میڈیا ٹرائل جاری ہے، عوام کی نظروں میں ن لیگ کو پی پی نہ بنایا جاسکا، کبھی دھاندلی اور کبھی کرپشن کےالزامات لگائےگئے، یہ سارے ہتھکنڈے ہیں یہ نیا پاکستان نہیں ہے۔

دانیال عزیز نے کہا کہ ٹرائل میں جانے کے لیے ایڑی چوٹی کا زورلگایا جارہا ہے، نواز شریف کے خلاف ثبوت ہے ہی نہیں تو ٹرائل میں کیا ہوگا، بس تماشا لگا رکھا ہے۔

دانیال عزیز کا کہنا تھا کہ جب کوئی رنگے ہاتھ پکڑا گیا تو گرفتار کیا گیا،  آئی سی آئی جے نے کہا کہ نام ہوناغلط کاری نہیں ، مخالفین شریف خاندان کی ساکھ خراب کرنے کی کوشش کررہےہیں، مخالفین دھرنے کی طرح مختلف تماشے لگانےکی کوشش کررہےہیں۔

مسلم لیگ ن کے رہنما نے عمران خان پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان اشتہاری ہیں،عدالتوں س بھاگ رہےہیں، متحدہ عرب امارات کے اندر مشینری کی نقل وحمل کا ریکارڈنہیں، 63 ملین ریال کی منتقلی کا ریکارڈ بھی موجودہے، جے آئی ٹی نے دستاویز سے متعلق سوالات نہیں کیے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں