The news is by your side.

Advertisement

نااہلی کے فیصلے سے نوازشریف کی سیاست کا وہ دورشروع ہوا جس سے مخالفین کو ڈرنا چاہئے،مریم اورنگزیب

اسلام آباد : وزیر مملکت برائے اطلاعات مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ نوازشریف کیخلاف ایک اورکیس کافیصلہ سنادیاگیاہے،نااہلی کے فیصلے سے نواز شریف کی سیاست کا وہ دورشروع ہوا جس سے مخالفین کو ڈرنا چایئے۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کور‌ٹ کے باہر وزیر مملکت برائے اطلاعات مریم اورنگزیب نے میڈیا سے گفتگو میں سابق وزیراعظم نواز شریف کی تاحیات نااہلی کے فیصلے پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا نوازشریف کیخلاف ایک اورکیس کافیصلہ سنادیاگیاہے، یہ وہی فیصلہ ہے جس پر ذوالفقار بھٹو کو پھانسی دی گئی تھی، یہ وہی فیصلہ جس پر بے نظیر بھٹو کو شہید کیا گیا تھا۔

عدلیہ پرتنقید کرتے ہوئے مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ آج ایک مرتبہ پھرمنتخب وزیراعظم کیخلاف فیصلہ سنایاگیا،یہ فیصلہ علی بابااور40چوروں کی کہانی بیان کرتاہے، اس فیصلے کا ٹرائل ہورہاہے، جوٹرائل سے پہلے ہی آگیا ہے، وہ فیصلہ آج بھی نیب کورٹ میں نامکمل ہے،

وزیر مملکت برائے اطلاعات نے کہا کہ نوازشریف پرآج بھی ایک روپےکرپشن ثابت نہ ہوسکی، نا اہلی کے فیصلے سے نواز شریف کی سیاست کا وہ دور شروع ہوا جس سے مخالفین کو ڈرنا چاہئے،اب نواز شریف مزید مضبوط ہوں گے،اصل کام اب شروع ہوا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ تالا لگے ہوئے صندوق آج بھی عدالت میں موجودہیں، منتخب وزیراعظم کونااہل کرنے کا عجیب طریقہ اپنایاگیا، واجد ضیا صاحب آج خود نواز شریف کی سچائی ثابت کررہےہیں، نامکمل ٹرائل پر نوازشریف کو نااہل کردیا جاتا ہے، مختلف ادوار میں اس قسم کےفیصلے آتے رہےہیں، جس بنیاد پرنااہل کیا گیا وہ الزام بھی آج تک ثابت نہ ہوسکا۔

وزیر مملکت برائے اطلاعات نے کہا کہ نامعلوم لوگ منتخب وزیراعظم کی سیاست کافیصلہ کرتےہیں، نامعلوم لوگوں نےپہلےنااہل،پھرپارٹی صدارت سے ہٹایا، سینیٹ میں پاکستان کی مقبول جماعت کوپیسوں سےہرایا گیا، اب تاحیات نااہلی سے متعلق فیصلہ سنادیاگیا۔

انھوں نے مزید کہا کہ اس قسم کی نااہلی کافیصلہ طیارہ کیس میں بھی سنایاگیاتھا، آئین توڑنےوالےشخص کوکسی قسم کی سزانہیں دی گئی، مقبولیت کونااہلی سے جوڑا جارہا ہے، یہ معصوم لوگ ہیں، عوام اس فیصلے کے متحمل نہیں ہوسکتے۔


مزید پڑھیں : سپریم کورٹ نے نوازشریف اور جہانگیرترین کو تاحیات نا اہل قرار دے دیا


مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ جب کچھ نہیں ملتا تونظریہ ضرورت استعمال کیاجاتاہے، اس وقت نظریہ ضرورت ووٹ کوعزت دوہے۔

خیال رہے کہ سپریم کورٹ نے ایک بڑا فیصلہ سناتے ہوئے آرٹیکل باسٹھ ون ایف کےتحت نااہل قراردیا گیا ، شخص مستقل نااہل قرارپائےگا، سپریم کورٹ کے فیصلے میں کہا گیا کہ نااہل شخص اس وقت تک نااہل رہےگاجب تک فیصلہ ختم نہیں ہوجاتا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں