The news is by your side.

Advertisement

مریم بی بی ہماری بیٹی ہیں، کسی معاملے پر ایک پارٹی کا فیصلہ نہیں چلے گا، آصف زرداری

اسلام آباد: پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین اور سابق صدر آصف زرداری نے  میثاق معیشت سے متعلق مریم نواز کے بیان پر ردِعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ مریم بی بی ہماری بیٹی ہیں، کسی بھی معاملے پر ایک پارٹی کا فیصلہ نہیں ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق سابق صدر آصف علی زرداری بجٹ سیشن میں شرکت کے لیے نیب ٹیم کے ہمراہ ایوان پہنچے جہاں انہوں نے صحافیوں سے غیررسمی گفتگو کی۔ مریم نواز کے میثاق معیشت سے متعلق بیان  پرآصف زرداری نے ردِعمل دیتے ہوئے انہیں اپنی بیٹی قرار دیا اور کہا کہ ہمارا نظریہ متحدہ اپوزیشن کی مشاورت کے بعد حتمی فیصلہ ہوگا، ایک پار ٹی کا کوئی فیصلہ کسی کو قابلِ قبول نہیں ہوگا۔

مفاہمت سے متعلق پوچھے جانے والے سوال پر آصف زرداری کا کہنا تھا کہ ’’یہ سوال ہی غلط ہے، یہ کون کہہ سکتا ہے کہ مفاہمت کا سلسلہ شروع ہوگیا‘‘۔نوازشریف یا شہباز شریف کا ساتھ دینے کے حوالے سے پوچھے گئے سوال کے جواب میں سابق صدر کا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی متحدہ اپوزیشن کے بیانیے کے ساتھ چلے گی۔

مزید پڑھیں: مریم نواز نے شہبازشریف کی میثاق معیشت کی تجویز کی مخالفت کردی

سابق صدر نے جنوبی وزیرستان میں پیپلز پارٹی امیدوار کی گرفتاری کو دھاندلی کا آغاز قرار دیتے ہوئے کہا کہ عمران مخلص وزیر کی گرفتاری سےانتخابات کی ساکھ سوالیہ نشان ہے، ہمارے امیدوار کی گرفتاری قابل مذمت ہے۔

اُن کا کہنا تھا کہ گرفتاریوں سےپیپلز پارٹی کےحامیوں کے حوصلے پست نہیں ہوں گے، الیکشن کمیشن اپنی ساکھ کے لیے عمران مخلص وزیر کی رہائی یقینی بنائے۔

یاد رہے کہ تین روز قبل اسپیکر اسمبلی اسد قیصر نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی تھی جس میں انہوں نے ملک کی معاشی صورتحال بہتر بنانے کے لیے میثاقِ معیشت کمیٹی کا مشورہ دیا تھا، اس کمیٹی میں سینیٹ و قومی اسمبلی کے اپوزیشن اراکین کو شامل کیا جائے گا تاکہ وہ ملکی معیشت کو مستحکم کرنے کے حوالے سے اپنے مشورے دیں۔

یہ بھی پڑھیں: اسپیکر وزیر اعظم ملاقات، میشاق معیشت کمیٹی پر مشاورت، اپوزیشن رہنماؤں کو بھی شامل کرنے پر غور

دوسری جانب مریم نواز نے میثاقِ معیشت کمیٹی کو مسترد کرتے ہوئے وضاحت کی تھی کہ چوروں سے ملک کی معاشی صورتحال بہتر کرنے کا مشورہ کیسے لیا جاسکتا ہے؟ مسلم لیگ ن کسی کمیٹی کا حصہ نہیں بنے گی، شہباز شریف پارٹی کے صدر ضرور ہیں مگر حتمی فیصلہ نوازشریف کو ہی ہوگا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں