The news is by your side.

Advertisement

الیکشن کمیشن کھویا ہوا وقار بحال کرنا چاہتا ہے تو دلیرانہ فیصلہ کرنا پڑے گا: مریم نواز

وزیر آباد: پاکستان مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہ 22 کروڑ عوام ووٹ کی عزت کے لیے الیکشن کمیشن کی طرف دیکھ رہے ہیں، الیکشن کمیشن کھویا ہوا وقار بحال کرنا چاہتا ہے تو دلیرانہ فیصلہ کرنا پڑے گا۔

وزیر آباد میں منعقدہ جلسے سے خطاب کرتے ہوئے مریم نواز نے الیکشن کمیشن سے ڈسکہ انتخاب میں دھاندلی کے سلسلے میں دلیرانہ فیصلے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا اب ووٹ چوروں کو سامنے لانا پڑے گا، الیکشن کمیشن کو اپنے وقار کی بحالی کے لیے دلیرانہ فیصلہ کرنا پڑے گا۔

مریم نواز نے کہا ایک حلقے کے ووٹوں پر ڈاکا ڈالنے کے لیے ایجنسیوں، انتظامیہ، پولیس فورس، وزرا، اور مشیروں نے پورا زور لگا لیا، ہمارے پاس پوری معلومات ہیں، یہ خود بتا دیں ورنہ ہم نام بتا دیں گے، ان سے پوچھا جائے ووٹ کیوں دیں کیا آٹا،چینی، گیس، بجلی سستی ہوگئی ہے؟ کیا کوئی بھی کام اس حکومت کا ٹھیک ہے؟ جب عوام بد دعائیں دے رہی ہو تو ایسے میں کون ووٹ دے گا۔

انھوں نے کہا یہ اتنے نااہل ہیں کہ دھاندلی بھی ٹھیک طرح نہیں کر سکے، اور اپنے پیچھے ثبوتوں کے انبار چھوڑ گئے، دھاندلی میں آئی بی اور ایجنسیوں کے لوگ ملوث تھے، خود اعتراف کر لیں ورنہ بے نقاب کر دوں گی۔

مریم نواز نے خطاب میں کہا ن لیگ نے پورے ڈسکہ میں دوبارہ پولنگ کا مطالبہ کیا ہے، عمران خان سیانا بن کر کہتے ہیں کوئی بات نہیں 20 پر دوبارہ پولنگ کرالو، کیا ڈسکہ وزیر آباد کے عوام اور ن لیگ کو پاگل سمجھ رکھا ہے، اب الیکشن ہوگا تو پورے حلقے میں دوبارہ ہوگا، الیکشن کمیشن سے درخواست ہے اب صرف چوری نہیں پکڑنی، ذوالفقار ورک نے حلف سے غداری کی ان کو سزائیں دی جائیں، ایسی سزا دی جائے تاکہ ووٹ چور کبھی بھی عوام کے ووٹ پر ڈاکا نہ ڈال سکے۔

انھوں نے کہا آئینی ترمیم پارلیمنٹ کا حق ہے، سپریم کورٹ پارٹی نہ بنے، اس سے عمران خان کی ڈوبتی کشتی کو سہارا ملے گا، حکومت کو ریلیف دیا گیا تو متعصبانہ فیصلہ سمجھیں گے۔

ن لیگی رہنما نے کہا مریم کے پاپا روزگار تو بعد میں لائیں گے پہلے ووٹ چوروں کو رلائیں گے، یہ نیا پاکستان نہیں بن رہا بلکہ پرانا پاکستان واپس آ رہا ہے، جن پولنگ اسٹیشنز پر عینک ٹوٹی، جہاں دھند بڑی تھی ان کا نتیجہ اچانک آسمان پر پہنچ گیا، جہاں 35 فی صد ٹرن آؤٹ تھا وہاں اچانک 80 فی صد پر پہنچ گیا، بڑی ایڈوانس ہے پی ٹی آئی پوری رات لائنوں میں لگ کر ووٹ ڈالتے رہے۔

مریم نواز نے مزید کہا کہ شیر کی طرح لڑنے پر ن لیگ کی شیرنیوں کو بھی مبارک باد دینا چاہتی ہوں، شیر کے ساتھ اب چھوٹی سی شیرنی بھی آنی چاہیے، مسلم لیگ ن اب شیرنیوں کی جماعت ہے، پوری انتظامیہ اور جعلی حکومت کو دو شیرنیوں نے دن میں تارے دکھا دیے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں