The news is by your side.

Advertisement

مائنس کرنے والے تھک گئے مگر نوازشریف پلس ہوتا جارہا ہے، مریم نواز

سیالکوٹ : سابق اور تاحیات نااہل وزیراعظم نوازشریف کی صاحبزادی مریم نواز نے کہا ہے کہ مخالفین نوازشریف کو مائنس کرتے کرتے تھک گئے مگر وہ پلس ہوتا جارہا ہے، اب جے آئی ٹی کے خلاف عوام کی جے آئی ٹی بنے گی۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے سیالکوٹ میں مسلم لیگ ن کے ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا، مریم نواز نے کہا کہ نوازشریف کوایک نہیں 4،4بار اسی مقدمے میں نااہل کیاجارہاہے، نوازشریف کو مائنس کرنے کی کوشش کی گئی تو وہ پہلے سے زیادہ مضبوط ہوکر سامنے آتے ہیں۔

نواز شریف کو بیٹے سے محض تنخواہ نہ لینے پر نااہل کرکے وزیراعظم ہاؤس سے نکالا گیا، انتقام کی آگ ٹھنڈی نہیں ہوئی تو زندگی بھر کیلئے نااہل کردیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ سیالکوٹ نے نوازشریف کو خواجہ آصف جیسا بیٹا دیا ہے، ہم سب کو خواجہ آصف پر فخر ہے، خواجہ آصف نے اپنی پارٹی کا ہر وقت ساتھ نبھایا اور ڈٹ کر کھڑا رہا، گلی گلی میں نظر آرہا ہے کہ آپ خواجہ آصف سے کتنی محبت کرتے ہیں۔

مریم نواز نے کہا کہ یہ کس کو دھوکہ دے رہے ہیں کہ نااہلی کی مدت تاحیات نہیں ہے، نااہلی کی مدت صرف اس وقت تک ہے جب تک فیصلے دینےوالے کرسیوں پر بیٹھے ہیں، مخالفین نے نوازشریف کو روکنے کیلئے30سال لگا دیئے، روک سکو تو روک لو، جسے عوام نہ روکے اسے کوئی نہیں روک سکتا۔

جلسے میں خطاب کرتے ہوئے اعلان کیا کہ جے آئی ٹی نے جتنے الزامات لگانے تھے لگا لیے اب جے آئی ٹی کے خلاف عوام کی جے آئی ٹی بنے گی، نواز شریف کے خلاف گواہی دینے والا واجد ضیا ہی ان کی بے گناہی کی گواہی دے گیا، واجد ضیا نے عدالت میں میرے سامنے کہا کہ بیٹے سے تنخواہ لینے کا کوئی ثبوت نہیں ہے، عوام اب سوال پوچھے گی کہ نوازشریف کو کوئی ثبوت نہ ملنے پر بھی نااہل کیوں کیا گیا۔

ان کا کہنا تھا کہ آج کی سزا نے مجھے مشرف کا دور یاد دلا دیا،2008کے الیکشن میں بھی نوازشریف کو اہل کرکے انتخابات سے باہر رکھا گیا تھا، نواز شریف کو مشرف نے دو بار عمر قید کی سزا سنائی تھی، ان کو ہتھکڑیاں لگائی گئیں، ملک سے 10سال کیلئے جلاوطن کیاگیا۔

ایک ڈکٹیٹر نے کہا تھا نوازشریف تاریخ کا حصہ بن گیا ہے۔ منتخب نمائندوں کو سنائی گئیں سزائیں آج تاریخ کے کوڑے دانوں میں پڑی ہیں، نواز شریف کو2بار عمر قید کی سزا سنانے والے آج کہاں ہیں؟ آنکھیں کھول کر دیکھو نوازشریف آج بھی کروڑوں دلوں پر راج کررہا ہےاور ڈکٹیٹر آج ملک سے باہر بیٹھا ہے اور واپس نہیں آسکتا۔

مریم نواز نے کہا کہ ملک میں 70سال سے عوام کے نمائندوں کے ساتھ ایسا ہی کچھ ہوتا آرہا ہے، نوازشریف کی آواز پر عوام نے لبیک کہا ،اب کی بارقوم جاگ رہی ہے، سازشیوں نے سوچا بیٹے سے تنخواہ لگانے کے الزام پر نوازشریف ملک چھوڑ کر چلا جائیگا، نوازشریف سازش کے خلاف کھڑا ہوگیا، نوازشریف نے کہا نہ میں جھکوں گا، نہ میں بکوں گا نہ میں ڈروں گا۔

انہوں نے کہا کہ نوازشریف اور مریم نواز کو جیل ہوجائے مگر عوام سچ جان چکی ہے، نوازشریف کو ہتھکڑی لگا کر جیل میں ڈال دو، عوام کا ساتھ ہو تو پرواہ نہیں۔

مریم نواز نے شرکاء سے پوچھا کہ ہاتھ اٹھا کر گواہی دو کیا نوازشریف کے خلاف ایک پیسے کی بھی کرپشن ثابت ہوئی؟ جس کے جواب میں شرکاء نے نہیں کا نعرہ لگایا۔

آصف زرداری اور عمران خان نے لکیر کے اس پار کھڑے ہوکر ہاتھ ملالیا ہے، سینیٹ کے الیکشن میں عمران خان نے تیر پر مہر لگائی تھی، آصف زرداری نے کہا عمران خان ہمارے آگے بک چکا ہے، عمران خان سیالکوٹ آئے تو اس نعرے سے استقبال کرنا عمران زرداری بھائی بھائی۔

انہوں نے کہا کہ ایک طرف نوازشریف آپ کے ووٹ کی عزت کےلئے لڑ رہا ہے تو لکیر کے دوسری طرف سازشی اور مہرے کھڑے ہیں۔ نوازشریف کیخلاف سازش کرنیوالے سن لیں، فیصلے کی گھڑی آرہی ہے،2018میں ن لیگ، شیر اور نوازشریف کو بارش کے قطروں کی طرح ووٹ پڑے گا، مخالفین سن سن لو نوازشریف کو روک سکو تو روک لو۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔  

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں