The news is by your side.

Advertisement

مشال خان قتل کیس، دو ملزمان کے نام ای سی ایل میں ڈالنے کی درخواست

مردان : مشال خان قتل کیس میں مطلوب دو اہم ملزمان عارف اور علی کے نام ایگزیکٹ کنٹرول لسٹ میں شامل کرنے کا فیصلہ کرلیا گیا تاکہ دونوں ملزمان بیرون ملک فرار نہ ہو سکیں۔ 

تفصیلات کے مطابق مشال قتل کیس میں اہم پیش رفت سامنے آئی ہے جس کے بعد  کے پی کے پولیس نے 2  ملزمان کے نام  ای سی ایل میں ڈالنے کے لیے درخواست دے دی ہے۔


*مشال خان قتل: یونی ورسٹی ملازمین سمیت تین ملزمان گرفتار


ذرائع کے مطابق آئی جی خیبر پختونخوا کی جانب سے مشال قتل کیس کے دو مرکزی ملزمان عارف اورعلی کےنام ای سی ایل میں ڈالنےکے لیے درخواست وزارت داخلہ کو بھیجوا دی گئی ہے جس میں دونوں ملزمان کی بیرون ملک سفر پر پابندی عائد کی گئی ہے۔


*مشال کو مارنے کے لیے یونیورسٹی انتظامیہ نے کہا، مرکزی ملزم کا اعتراف


اس حوالے سے ڈی آئی جی مردان عالم شنواری نے بتایا کہ ملزم عارف کے پاسپورٹ کی مدت بھی ختم ہوچکی ہے اس لیے اس کے مفرور ہونے کی خبروں میں صداقت نہیں اور جلد دونوں ملزمان کو گرفتار کرلیا جائے گا۔


*مشال کے قاتلوں کو پہچان سکتا ہوں ، دوست عبداللہ


واضح رہے اس سے قبل ڈی آئی جی مردان نے ایک پریس کانفرنس میں مرکزی ملزم عارف کو پیش کیا تھا جو مبینہ طور یونیورسٹی کا ملازم تھا اور ہجوم کو ورغلانے میں مرکزی کردار ادا کیا تھا۔

دوسری جانب اطلاعات تھیں کہ مشال خان پر گولی چلانے والا ملزم عارف ملک سے فرار ہو گیا ہے جس کے بعد خیبر پختونخوا پولیس نے وضاحتی بیان جاری کیا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں