The news is by your side.

Advertisement

لال مسجد کے مولانا عبدالعزیزنے جنرل پرویز مشرف کو معاف کردیا

اسلام آباد: لال مسجد کے شعلہ بیاں مقررمولانا عبدالعزیزنے کہا ہے کہ وہ ’’سابق صدرپرویزمشرف اورلال مسجد آپریشن میں ملوث دیگرعناصرکو معاف کرتے ہیں‘‘۔

لال مسجد کے خطیب مولانا عبدالعزیز نے یہ اعلان اتوار کو صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ اس دوران ان کے ساتھ ان کی اہلیہ ام حسان اورلعل مسجد آپریشن میں مارے جانے والے ان کے بھائی عبدالرشید غازی کے بیٹے ہارون غازی بھی موجود تھے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ ان کے معافی دینے کا مطلب یہ نہیں کہ مشرف کوئی معصوم شخص ہیں بلکہ ان کے خلاف کئی جرائم میں کیسز عدالت ِ عظمیٰ میں چل رہے ہیں۔

مولانا غازی کا یہ بھی کہنا تھا کہ انہوں سابق صدراور فوجی حکمران جنرل پرویز مشرف کو معافی ملک میں امن کے قیام کے لئے دی ہے ، انہوں نے مزید کہا کہ وہ پہلے ہی یہ اعلان کردیتے تاہم انہیں اپنے اہل خانہ کو قائل کرنے میں وقت لگا۔

سابق صدر پرویز مشرف کے آٹھ سالہ دوراقتدارکے حوالےسے متعدد کیسز چل رہے ہیں جن میں لال مسجد ملٹری آپریشن میں مولانا عبدالعزیزغازی کے بھائی عبدالرشید غازی سمیت سو سے زائد افراد کی ہلاکت کا مقدمہ بھی شامل ہیں۔

لال مسجد کی جانب سے بارہا مسلح کاروائیوں کے بعد اس وقت کی حکومت نے لال مسجد کے خلاف فوجی کاروائی کا فیصلہ کیا تھا جس کے ردعمل میں 2007 کے بعد ملک میں دہشت گرد حملوں کا تناسب بڑھ گیا۔

لال مسجد آپریشن کی چند تصویری دھمکیاں

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں