The news is by your side.

Advertisement

نواز شریف کے اسپتال جانے سے انکار پر میڈیکل ٹیم جیل ہی میں چیک اپ کے لیے پہنچ گئی

لاہور: سابق وزیر اعظم نواز شریف نے دل میں تکلیف کے باوجود امراض قلب کے اسپتال منتقل ہونے سے انکار کیا جس پر میڈیکل ٹیم نے جیل ہی میں ان کا چیک اَپ کیا۔

تفصیلات کے مطابق ڈاکٹرز کی ٹیم نے حکومتی نمائندے اور جیل سپرنٹنڈنٹ کے ہم راہ نواز شریف سے ملاقات کی، میڈیکل ٹیم نے سابق وزیرِ اعظم کا چیک اپ کیا۔

نواز شریف کا جیل میں بلڈ پریشر چیک کیا گیا ہے، وہ اس وقت بالکل ٹھیک ہیں۔

ترجمان پنجاب حکومت

ترجمان پنجاب حکومت شہباز گل نے بتایا کہ جیل میں نواز شریف کا چیک اپ کیا گیا ہے۔

ترجمان شہباز گل کا کہنا تھا کہ وزیرِ اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے نواز شریف کو اسپتال منتقل کرنے کی ہدایت کی تھی لیکن نواز شریف نے جیل سے اسپتال جانے سے انکار کیا۔

ترجمان پنجاب حکومت نے کہا ’پنجاب حکومت نواز شریف کی مرضی کے کسی بھی اسپتال منتقلی کو تیار ہے۔‘

ترجمان ڈاکٹر شہباز گل نے میڈیا کو بتایا کہ نواز شریف کا جیل میں بلڈ پریشر چیک کیا گیا ہے، وہ اس وقت بالکل ٹھیک ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  حکومت کا نواز شریف کو جیل سے اسپتال منتقل کرنے کا فیصلہ، سابق وزیر اعظم کا انکار

واضح رہے کہ پنجاب حکومت نے نواز شریف کی طبیعت کی خرابی کے باعث وزیر اعظم عمران خان کی ہدایت پر انھیں پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی منتقل کرنے کی تیاریاں مکمل کی تھیں لیکن سابق وزیر اعظم نے اسپتال جانے سے انکار کر دیا تھا۔

مریم نواز نے کہا تھا کہ نواز شریف کو انجائنا کی تکلیف ہے، ایک ہفتے میں چار بار انھیں درد اٹھا، مگر وہ اسپتال جانے سے انکاری ہیں، مریم نواز سمیت لیگی رہنما نواز شریف کی صحت پر اظہار تشویش کرتے رہتے ہیں، نواز شریف بھی بیماری کو جواز بنا کر ضمانت پر رہائی چاہتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں