یمن: سرکاری فوج کی کارروائی، 58 جنگجوں ہلاک، درجنوں زخمی ہوگئے
The news is by your side.

Advertisement

یمن: سرکاری فوج کی کارروائی، 58 جنگجوں ہلاک، درجنوں زخمی

صنعا: یمن میں سرکاری فوج کی کارروائی کے نتیجے میں 58 حوثی باغی ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق یمنی بندرگاہی شہر الحدیدہ میں سرکاری فوج نے چڑھائی کردی جس کے باعث 58 حوثی باغی مارے گئے جبکہ متعدد زخمی ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق یمنی فوج کی اس اہم کارروائی میں سعودی عسکری اتحاد کی بھی مدد حاصل رہی، حکام نے ہلاکتوں کی تصدیق کردی۔

دوسری جانب گذشتہ روز سعودی قيادت ميں عسکری اتحاد کی جانب سے کيے جانے والے فضائی حملوں ميں درجنوں باغی ہلاک ہوئے، جبکہ 11 فوجی اہکار بھی مارے گئے۔

انسانی حقوق کی تنظیموں نے خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ حالات سنگین ہیں، آپریشن جاری رہا تو سیکڑوں عام شہریوں کی ہلاکتیں ہوسکتی ہیں۔

اقوام متحدہ کی رپورٹ کے مطابق 2015 سے 2017 تک 10 ہزار افراد مارے جاچکے ہیں، جبکہ اس سال کے اعداد وشمار منظرعام پر نہیں آئے۔

یمن: سرکاری فوج نے بڑا آپریشن شروع کردیا، باغیوں سے شدید جھڑپیں

خیال رہے کہ گذشتہ دنوں سعودی اتحاد کی جانب سے یمن میں غیرمعمولی نوعیت کے فضائی حملے ہوئے تھے، جس کے باعث ڈیڑھ سو شدت پسند ہلاک جبکہ سو سے زائد زخمی ہوگئے تھے۔

یاد رہے کہ الحدیدہ بندرگاہ پر سعودی عسکری اتحاد کی جانب سے حوثی انخلا کے لیے ایک بڑا فوجی آپریشن کیا گیا تھا جس میں یمنی فوجیوں نے بھی حصہ لیا تھا۔

البتہ اب تک باغیوں کا انخلا عمل میں نہیں آیا، جبکہ عسکری اتحاد کے ترجمان کی جانب سے دعویٰ بھی سامنے آیا تھا کہ وہ جلد الحدیدہ کو باغیوں سے کلیئر کرالیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں