The news is by your side.

Advertisement

میشا شفیع ہرجانہ کیس: گواہ کی بیان ریکارڈ کراتے ہوئے طبیعت خراب

لاہور: لاہور کی مقامی عدالت میں میشا شفیع کے خلاف ہرجانہ کیس میں اہم گواہ کی بیان ریکارڈ کراتے ہوئے طبیعت خراب ہوگئی۔

تفصیلات کے مطابق سیشن کورٹ میں گلوکار علی ظفر کی جانب سے میشا شفیع کےخلاف ہرجانہ کیس کی سماعت ہوئی، میشا شفیع کی جانب سے گواہ اداکارہ عفت عمر عدالت میں پیش ہوئیں، جہاں انہوں نے اپنے بیان ریکارڈ کرایا۔

اداکارہ عفت عمر کے بیان ریکارڈ کرانے کے دوران وکیل علی ظفر نے گواہ سے سوال کیا کہ آپ نے پروگرام میں کہا تھا راحت کاظمی سے گلے ملکر اپنی خواہش پوری کی، جس پر عفت عمر نے کہا کہ راحت کاظمی ایک بڑی شخصیت ہیں میں نے صرف مذاق میں بات کہی، اسی دوران میشا شفیع کے وکیل نے علی ظفر کے وکیل کے سوال پر اعتراض کرتے ہوئے کہا کہ اس سوال کا کیس سےکوئی تعلق نہیں ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  ہتک عزت کیس: علی ظفر کی میشا شفیع کے سفری اخراجات برادشت کرنے کی پیشکش

دوران سماعت علی ظفر اور میشا شفیع کے وکلا کے درمیان اس سوال پر ایک شدید تکرار ہوئی، جو بعد ازاں تلخ کلامی تک جاپہنچی، عدالتی حکم کے بعد فریقین کے وکلا خاموش ہوئے، اس موقع پر وکیل میشا شفیع نے کہا کہ جو سوالات آپ پرہو رہےہیں ان کا سرپیر ہی معلوم نہیں؟Iffat Omar All Set To Dazzle As A Host On A Web Show - HIPبیان ریکارڈ کراتے ہوئے اداکارہ عفت عمر کا کہنا تھا کہ راحت کاظمی سے متعلق بات 35سال پرانی ہے مجھےٹھیک طرح سے بھی یادنہیں ہے، جس پر عدالت میں عفت عمر کا راحت کاظمی سے متعلق بیان لیپ ٹاپ پرچلایا گیا، اس دوران عفت عمر نے کہا کہ میری طبیعت خراب ہورہی ہے، مجھے چکر آرہے ہیں، جس پر عدالت نے سماعت کچھ دیر کیلئےملتوی کردی۔

بعد ازاں دوبارہ سماعت کا آغاز ہوا تو وکیل علی ظفر نے گواہ سے سوال کیا کہ کیا آپ گلوکار فرہاد ہمایوں کو جانتی ہیں ؟ جس پر اداکارہ کا کہنا تھا کہ جی میں اوورلوڈ بینڈ کے فرہاد ہمایوں کو جانتی ہوں، مجھے علم نہیں میشا، شوہر کیخلاف آلات موسیقی کی چوری کا مقدمہ درج ہے، اتنا یقین ہے کہ فرہاد ہمایوں نےمیشاشفیع کیخلاف جھوٹا مقدمہ درج کرایا ہے، بعد ازاں عدالت نے کیس کی سماعت انیس دسمبر تک ملتوی کردی، اگلی سماعت پر بھی عفت عمر کے بیان پر علی ظفر کے وکیل کی جرح جاری رہےگی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں