The news is by your side.

Advertisement

مقبوضہ کشمیر : محبوبہ مفتی کی بیٹی کا آڈیو پیغام سامنے آگیا

سری نگر: مقبوضہ کشمیر کی سابق وزیراعلیٰ محبوبہ مفتی کی بیٹی ثنا مفتی نے اپنا آڈیو پیغام جاری کردیا جس میں انہوں نے مقبوضہ وادی کے کشیدہ حالات سے آگاہ کیا۔

سابق وزیراعلیٰ کی صاحبزادی نے اپنی دوست کو آڈیو پیغام بھیجا جس میں انہوں نے بتایا کہ وادی کے حالات انتہائی کشیدہ ہیں اور یہاں خوف کا ماحول ہے جبکہ کشمیریوں کے ساتھ بھارتی فوج جانوروں جیسا برتاؤ کررہی ہے۔

ثنا مفتی کا کہنا تھا کہ ’’آرٹیکل 370 ختم ہونے کے بعد کشمیریوں میں اشتعال پایا جارہاہ ے، البتہ انہیں اپنے جذبات کے اظہار کی اجازت نہیں، میری والدہ کو بھی بلاجواز حراست میں لے لیا گیا، اُن پر تو سخت نظر بندی تھی اب انہیں کسی سے بھی ملنے کی اجازت نہیں ہے‘‘۔

سابق وزیر اعلیٰ کی صاحبزادی نے بتایا کہ مقبوضہ کشمیر میں ٹیلی فون سروس بند کر کے بھارتی قیادت کشمیریوں کے حوصلے پست کرنا چاہتی ہے، اگر آرٹیکل 370 ختم کرنا اچھا اقدام ہے تو بھارت نے کشمیریوں سے بولنے کا حق کیوں چھین لیا۔

انہوں نے کہا کہ ’’آپ کو اکھنڈ بھارت پر بڑا غرور ہے کیا یہی وہ بھارت ہے جہاں عوام کے حقوق چھینے کے بعد جشن  منایا جارہا ہے۔ ثنا مفتی کا کہنا تھا کہ بھارت آخر کب تک کشمیریوں کو گھروں میں بند رکھے گا، یہ آوازیں کب تک دبائے گا، جلد ہی اُسے منہ کی کھانی پڑے گی‘‘۔

یاد رہے کہ بھارت نے آرٹیکل 370 اور 35 اے ختم کرنے کے بعد کشمیری قیادت کو نظر بند کردیا ہے، اس ضمن میں سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی اور عمر عبداللہ کو نظر بند کر کے انہیں حراست میں لیا گیا۔

دونوں رہنماؤں کو اُس وقت حراست میں لیا گیا کہ جب اتوار کوعمر عبداللہ کے گھر پر ایک اجلاس جاری تھا جس میں مقبوضہ کشمیر کی بگڑتی ہوئی صورت حال پر بات چیت کی گئی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں