The news is by your side.

Advertisement

یوم دفاع پر صدرمملکت اور وزیراعظم پاکستان کا قوم کے نام پیغام

اسلام آباد: یوم دفاع پاکستان کے موقع پر صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی اور وزیراعظم عمران خان نے قوم کے نام الگ الگ پیغامات دیے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی نے قوم کے نام اپنے پیغام میں کہا کہ یوم دفاع ہمیں افواج پاکستان،قوم کے جذبے اور بہادری کی یاد دلاتا ہے۔

صدر مملکت نے کہا کہ 55 سال قبل آج کے دن دشمن کے ناپاک عزائم کو خاک میں ملا دیا تھا،مسلح افواج نے مثالی جراتمندی اور پیشہ ورانہ مہارت سے دشمن کو شکست دی، شہدا کے اہل خانہ نے وطن کی سلامتی کے لیے اپنے پیاروں کی قربانی دی۔

ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ آج پوری قوم شہدائے وطن کو سلام پیش کرتی ہے،جذبہ ستمبر1965 ہمارے دلوں میں آج بھی زندہ ہے، فخر ہے کہ اسی جذبے کی بدولت ہم بہت سےامتحانوں میں سرخروہوئے۔

صدرِ پاکستان کا کہنا تھا کہ افواج کی پیشہ ورانہ مہارت،جذبہ ایمانی نے پاکستان کو ناقابل تسخیربنا دیا، خوشی ہے کہ دفاعی میدان میں ہم خود انحصاری کی منزل حاصل کرچکے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہماری افواج سرحدوں کی حفاظت کے ساتھ ملکی استحکام ،تعمیر وترقی میں بھی کردار ادا کر رہی ہیں،ہم نے خطے کے امن اور سلامتی کے لیے بھی مثبت اور سنجیدہ کوششیں کی ہیں۔

ڈاکٹر عارف علوی نے اپنے پیغام میں کہا کہ بدقسمتی سے ہمارا ازلی دشمن آج بھی ہمارےخلاف جارحانہ عزائم رکھتا ہے،دشمن ہمارے اندرونی استحکام کو نقصان پہنچانے کی سازشوں میں ملوث ہے،دشمن کا یہ جارحانہ رویہ خطے کے امن اور استحکام کے لیے بہت بڑا خطرہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہماری پالیسی واضح ہے اپنے دفاع اور سلامتی پر ہرگز سمجھوتا نہیں کریں گے،دشمن کی کسی بھی قسم کی جارحیت کا منہ توڑ جواب دیا جائے گا۔

صدر مملکت نے کہا کہ آج ہم کشمیریوں کی اصولی حمایت جاری رکھنے کےعہد کی تجدید کرتے ہیں،کشمیریوں کے حق خودارادیت کے حصول تک ان کا ساتھ دیتے رہیں گے۔

انہوں نے اپنے پیغام میں کہا کہ ہم نے بیرونی جارحیت کو شکست دی، دہشت گردی اورانتہا پسندی پرقابو پایا،اب ہم معاشی خوشحالی کی راہ پر گامزن ہیں۔

ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ ماد روطن پر جانیں نچھاور کرنے والےعظیم ہیروز کو سلام پیش کرتا ہوں،عہد کریں! وطن کی سلامتی، تحفظ اورخوشحالی کے لیے اپنا کردار ادا کریں گے۔

یوم دفاع پر وزیراعظم کا قوم کے نام پیغام

وزیراعظم عمران خان نے یوم دفاع پر اپنے پیغام میں کہا کہ 6 ستمبر کا دن بہادرافواج کی جرات،قربانی کے بے مثال جذبے کا عکاس ہے،55 سال قبل مسلح افواج اور غیور قوم نے دنیا پر ثابت کیا،ہم مادر وطن کے چپے چپے کے دفاع کے لیے ہمہ وقت تیار ہیں۔

وزیراعظم پاکستان نے کہا کہ قوم اور مسلح افواج نے ثابت کیا کہ حجم اہمیت نہیں رکھتا،جذبہ،ولولہ ،جرات وبہادری سب سے زیادہ اہمیت رکھتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ بھارت نے آرٹیکل 370 اور 35 اے ختم کر کے یو این منشور کی خلاف ورزی کی،بھارت نے بے گناہ کشمیریوں پر دہشت اورخوف کا راج مسلط کر رکھا ہے۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ بھارت لائن آف کنٹرول پربھی جارحانہ طرزعمل کا مظاہرہ کر رہا ہے،بھارتی اشتعال انگیزیوں کا مقصد کشمیر میں مظالم سے توجہ ہٹانا ہے۔

انہوں نے اپنے پیغام میں کہا کہ پاکستان امن کا علمبردار ہے،اسے کمزوری نہیں سمجھا جانا چاہیے،ہماری امن کی خواہش جنوبی ایشیا کے عوام کی خوشحالی کے لیے ہے،آئندہ نسلوں کے تابناک مستقبل کے لیے مل کر کام کرنے کی ضرورت ہے۔

وزیراعظم پاکستان نے کہا کہ قوم اور بہادر افواج ملک کے دفاع کی بھرپورصلاحیت رکھتی ہیں،کسی بھی قسم کی صورتحال سے نبردآزما ہونے کے لیے پوری طرح تیارہیں۔

انہوں‌ نے کہا کہ 6 ستمبر کے موقع پراپنے شہدا اور غازیوں کو سلام پیش کرتے ہیں،آج ملک کے دفاع،سلامتی ،خودمختاری،تحفظ کےعزم کی تجدید کرتے ہیں،اس عزم کی تجدید جس کا مظاہرہ 65 کی جنگ کے شہدا،غازیوں نے کیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں