The news is by your side.

Advertisement

تارکین وطن کی بچوں سے علیحدگی، ٹرمپ کو شدید احتجاج کا سامنا

واشنگٹن: تارکین وطن کو بچوں سے الگ کرنے پر امریکی صدر ٹرمپ کو شدید احتجاج کا سامنا کرنا پڑرہا ہے، نیویارک سمیت امریکا بھر میں شہری سڑکوں پر آگئے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق میکسیکو نے تارکین وطن سے متعلق امریکی رویے کو غیر انسانی قرار دیا ہے، امریکی صدر ٹرمپ کے تارکین وطن کو داخلے سے روکنے کے خلاف نیویارک سمیت امریکا بھر میں احتجاج شروع ہوگیا ہے۔

امریکا کے شہری تارکین وطن اور ان کے بچوں کو علیحدہ رکھنے کے خلاف سڑکوں پر آگئے اور ٹرمپ کی تارکین وطن سے متعلق پالیسی کو واپس لینے کا مطالبہ کیا گیا۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو کیپیٹل ہل کے دورے کے دوران بھی عوامی احتجاج کا سامنا کرنا پڑا، ایک شہری نے ٹرمپ کو مخاطب کرتے ہوئے بچوں کا احساس دلانے کی کوشش کی۔

میکسیکو کی جانب سے بھی تارکین وطن کو بچوں سے الگ رکھنے کے عمل کو غیر انسانی قرار دیا گیا ہے، ٹرمپ کے حکم پر 2 ہزار بچوں کو اپنے والدین سے علیحدہ ایک مرکز میں ٹھہرنے پر مجبور کردیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ امریکی خاتون اول میلانیا ٹرمپ نے امریکی صدر کی میکسیکو مہاجرین سے متعلق پالیسی پر کہا تھا کہ بچوں کو ان کے والدین سے جدا کرنے پر نفرت ہے۔

میلانیا ٹرمپ کا کہنا تھا کہ مسئلے کے حل کے لیے دونوں کو امیگریشن اصلاحات پر کام کرنا چاہئے، بچوں کو ان کے والدین سے جدا نہیں کرنا چاہئے۔

میلانیا ٹرمپ کا کہنا تھا کہ ہمیں ایسا ملک ہونا چاہئے جو تمام قوانین کی پاسداری کرے لیکن اس کے ساتھ ہی ہمیں ایسا ملک بھی ہونا چاہئے جہاں رحم دلی کی حکومت ہو۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں